medicine

سرکاری ہسپتال اور دردِدل

ایم اے راجپوت
وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے گزشتہ روز طیب رجب اردوان ہسپتال مظفرگڑھ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری ہسپتالوں کے پاس وسائل ،ڈاکٹر ،عملہ اور ادویات موجود ہیں ،صرف دردِ دل کی کمی ہے ۔دکھی انسانیت کی توقعات پر پورا اترنا میرا مشن ہے ۔پنجاب کت تمام ہسپتالوں کو ٹھیک کر کے دم لیں گے ۔صوبائی اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید نے کھادوں کی سبسڈی ختم کرنے کے خلاف ایک قرارداد اور صوبے میں اہم شعبہ جات کی اتھارٹیز کے قیام کے خلاف تحریک التواے کار گزشتہ روز اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کرا دیں۔علاوہ ازیں پی ٹی آئی کے ارکان صوبائی اسمبلی سعدیہ سہیل رانا اور شعیب صدیقی نے بھی خواتین کی ترقی اور سرکاری اراضی پر قبضے کے حوالے سے دو تحاریک التوا جمع کرائی ہیں۔عوامی تحریک یوتھ ونگ نے ملک گیر نظام بدلو سائیکل ریلی کے بعد اب امن دستخطی مہم کا آغاز کردیا ہے ۔لاہور ہائی کورٹ نے ملٹی نیشنل کمپنیوں کے بیج کے استعمال کولازمی قرار دینے کے خلاف دائر درخواست پروفاقی حکومت کے علاوہ پنجاب حکومت سے بھی جواب طلب کر لیا ہے ۔ طاہر القادری کا کہنا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ذمہ دارپولیس افسران کو حکمرانوں نے پناہ دے رکھی ہے ۔لیکن ماڈل ٹاؤن کے قاتل یاد رکھیں کہ قصاص تحریک کا دوسرا راؤنڈ ابھی باقی ہے ۔
چیئرمین اینٹی کرپشن و نارکوٹکس کمیشن انیس الرحمان بٹ کا کہنا ہے کہ حکمران طبقہ اور سرکاری ادارے باہم مل کر سالانہ 25کھرب روپے سے زائد کی خوردبرد کرتے ہیں۔جبکہ کرپشن اور اقربا پروری کے باعث تباہ ہونے والی کارپوریشنز پر سالانہ 500ارب روپے خرچ ہو رہے ہیں ۔بجلی و گیس کی لوڈشیڈنگ کے باعث شہریوں کی مشکلات بڑھ گئی ہیں۔گزشتہ روز بھی شہروں میں آٹھ سے دس گھنٹے تک لوڈ شیڈنگ ہوئی ۔جبکہ سردی بڑھنے سے گیس پریشر میں کمی کا مسئلہ بھی شدت اختیار کر گیا ہے ۔کئی اضلاع میں تو لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 15سے 18گھنٹے تک بڑھ گیا ہے۔محکمہ ایکسائز نے سرکاری افسروں ،ملٹی نیشنل کمپنیوں ،ڈاکٹرز ،حکماء ،پراپرٹی ڈیلرز شوروم ،فیکٹری مالکان سمیت مختلف اداروں سے 16کروڑ 87لاکھ روپے کا پروفیشنل ٹیکس لینے کے لئے کریک ڈاؤن شروع کردیا ہے ۔اس سلسلے میں آخری نوٹس جاری کردیئے گئے ہیں۔شادی شدہ پولیس افسران کے لئے لاہور میں رہائشی فلیٹس کا منصوبہ ایک بار پھر کھٹائی میں پڑ گیا۔2010ء میں شروع کیا جانے والا یہ منصوبہ تاحال مکمل نہیں ہوسکا۔ایک رپورٹ کے مطابق اس وقت لاہور شہر کی ایک کروڑ سے زائد آبادی کے لئے صرف 21پبلک ٹوائلٹس ہیں جن میں سے بیشتر ضلعی حکومت نے ٹھیکے پر دے رکھے ہیں۔لاہور شہر کی اوپن مارکیٹ میں سرکاری نرخنامے سے زائد قیمت پر سبزیوں کی فروخت کا سلسلہ جاری ہے ۔شہریوں نے پرائس کنٹرول کمیٹیوں سے گراں فروشوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔ایک رپورٹ کے مطابق پنجاب لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013ء کے نفاذ کے باوجود ایکٹ چلانے کے لئے تاحال رولز بن سکے نہ ہی سٹی ڈسٹرکٹ حکومتوں کے اثاثہ جات کارپوریشنوں ،ضلع کونسلوں اور میونسپل کمیٹیوں کو منتقل ہوسکے۔
گزشتہ روز گوجرانوالہ کے علاقے واہنڈو کے ایک نجی گرلز کالج کی چھت پر گفٹ پیک میں کریکر لپیٹ کر کالج کی چھت پر پھینکا گیا ۔جب اس پیکٹ کو ایک طالبہ منیبہ نے کھولا تو زوردار دھماکہ ہوا جس سے منیبہ کی چار انگلیاں کٹ گئیں جبکہ اس کے پاس کھڑی جویریہ کی آنکھیں متاثر ہوئیں ۔علاوہ ام خدیجہ نامی طالبہ بھی زخمی ہوئی ۔کالج کو سیل کرکے مختلف پہلوؤں سے تحقیقات شروع کردی گئیں۔گزشتہ روز پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ٹیموں نے لاہور کے مختلف داخلی راستوں ناکے لگا کر شہر میں لایا جانے والا دودھ چیک کیا اور دو ہزار لٹر سے زائد ناقص دودھ کو موقعہ پر ضائع کر دیا گیا ۔ڈی پی او آفس گجرات کا اکاؤنٹنٹ 2کروڑ پانچ لاکھ روپے کی کرپشن کے بعد اپنے خلاف محکمانہ تحقیقات شروع ہونے پر بیرون ملک فرار ہو گیا۔ملزم نے تیل کی مد میں 75لاکھ روپے اور پولیس کے دیگر اخراجات کی مد میں ایک کروڑ 30لاکھ روپے کی مبینہ کرپشن کی ہے ۔آڈٹ برانچ نے گزشتہ تین سال کی تحقیقات شروع کر دی ہیں اور اس سلسلے میں سابق ڈی پی او گجرات رائے ضمیر الحق کو بھی شامل تفتیش کیا جائے گا۔اطلاعات کے مطابق دو ڈھائی ماہ قبل گورنمنٹ سائنس کالج وحدت روڈ لاہور کے پروفیسر الطاف کو قتل کرنے والوں میں سے ایک مبینہ قاتل کو پولیس نے مع اسلحہ و موٹر سائیکل گرفتار کر لیا ہے ۔گزشتہ روز لاہور میں چوری و ڈکیتی کی 17سے زائد وارداتیں ہوئیں جن میں لاکھوں روپے لوٹنے کے علاوہ دو گاڑیاں اور چار موٹر سائیکلیں چوری کی گئیں جبکہ کریم پارک میں ایک ڈاکو کو شہریوں نے پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا۔ملتان میں بوسن روڈ پر زیر تعمیر پلازہ گرنے سے تین افراد جاں بحق او ر کئی مزدور ملبے تک دب گئے ۔گزشتہ روز پروفیسر سلمان حیدر کی بازیابی کے لئے سول سوسائٹی اور پیپلز پارٹی نے لاہور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔سیشن کورٹ لاہور نے عدالتی حکم نہ ماننے پر پانچ سب انسپکٹرز اور اسسٹنٹ سب انسپکٹر ز کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے ۔ٹریفک پولیس لاہور کے مال خانے میں بے ضابطگیوں اور چوری کا انکشاف ہوا ہے ۔حکام نے چھ سال بعد اب اس مال خانے کا آڈٹ کرانے کا فیصلہ کیا ہے ۔
ایک رپورٹ کے مطابق سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کے ریکارڈ کا سسٹم نہ ہونے علاج کی فراہمی کا نظام متاثر ہورہا ہے ۔ایمرجنسی وارڈ میں آنے والے مریضوں کے ریکارڈ اور وقت کو درج کرنے کے لئے کوئی رجسٹر یا کمپیوٹر نہیں ہے ۔زہرہ بی بی کیس میں بھی انکوائری کمیٹی کو ریکارڈ حاصل کرنے میں دقت کا سامنا ہے ۔جناح ہسپتال زہرہ بی بی کیس میں پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل نے لاہور کے نجی عارف میموریل ٹیچنگ ہسپتال کے حوالے سے بھی تحقیقات شروع کردی ہیں کیونکہ زہرہ بی بی کو وہاں بھی لایا گیا تھا لیکن انتظامیہ نے مریضہ کو داخل نہ کیا۔المحمدیہ سٹوڈنٹس پر امریکی پابندیوں کے خلاف ملک بھر کی طرح پنجاب کے مختلف شہروں میں بھی احتجاج جاری ہے ۔گزشتہ روز انجینئرنگ یونیورسٹی لاہور کے علاوہ سرگودھا ،ملتان اور چکوال سمیت مختلف شہروں میں طلبہ تنظیموں نے احتجاجی ریلیاں نکالیں ۔