india-china-border

چینی صوبے سنکیانگ کی سرحدی نگرانی بڑھانے پر غور

چین کے حکام نے دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے خطرات کے پیش نظر شمال مغربی علاقے سنکیانگ پر بارڈر کنٹرول مزید سخت کرنے کا حکم دیا ہے۔ چینی میڈیا کے مطابق منگل کو شنگ جیانگ کے گورنر شہرت ذاکر نے مرکزی سالانہ سیاسی اجلاس کے دوران اپنے خطاب میں کہا کہ گذشتہ سال کیے جانے والے اقدامات کو مزید مضبوط کیا جائے گا۔’واضح رہے کہ سنکیانگ صوبے کی سرحدیں پاکستان سمیت افغانستان اور دیگر چار وسطی ایشیائی ممالک سے ملتی ہیں۔خیال رہے کہ چین کی اویغور اقلیتی برادری کی اکثریت سنکیانگ میں رہائش پذیر ہے اور سنکیانگ کی 45 فیصد آبادی ایغور مسلمانوں پر مشتمل ہے۔چین میں دو کروڑ اویغور مسلمان آباد ہیں۔