download-1

کاروں کی فروخت میں 4.3 فیصد کی کمی

رواں مالی سال 2016۔17ء کی پہلی ششماہی کے دوران ملک میں تیار کی جانے والی کاروں کی فروخت میں 4.3 فیصد کی کمی واقع ہوئی ہے۔ اور جولائی تا دسمبر 2016ء کے دوران 85 ہزار 901 یونٹس فروخت کئے گئے۔ پاکستان آٹو موٹیو مینو فیکچررز ایسوسی ایشن (پاما) کے اعدادوشمار گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال میں کاروں اور ہلکی کمرشل گاڑیوں کی فروخت میں بھی مجموعی طور پر 13 فیصد کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق ٹیوٹا کرولا گاڑیوں کی فروخت میں 6.9 فیصد کی کمی سے 25 ہزار 768 یونٹس فروخت ہوئے جبکہ ہنڈا سویک اور سٹی گاڑیوں کی فروخت میں 56.2 فیصد کے اضافہ سے ان کی فروخت 16 ہزار 571 یونٹس تک بڑھ گئی۔ اسی طرح سوزوکی کلٹس کی فروخت میں 10.7 کی کمی سے فروخت کا حجم 7 ہزار 103 یونٹس تک کم ہو گیا جبکہ ویگن آر کی فروخت میں 86.1فیصد کا نمایاں اضافہ ہونے سے 7 ہزار 565 یونٹس فروخت ہوئے۔ اسی طرح سوزوکی مہران کی فروخت میں 4.7 فیصد کی کمی سے انکی فروخت 17 ہزار 167 یونٹس رہی ہے۔ اور بولان کی فروخت میں بھی 50.7 فیصد کی کمی سے 9ہزار 613 یونٹس فروخت کئے گئے۔ ٹاپ لائن سیکیورٹیز کی رپورٹ کے مطابق جاری مالی سال کے دوران 60 ہزار گاڑیوں کی درآمد متوقع ہے جس کے باعث رواں مالی سال کے دوران ملک میں تیار کی جانے والی اور درآمد کی گئی گاڑیوں کی فروخت کا مجموعی حجم 2لاکھ 70ہزار یونٹس تک رہنے کا امکان ہے۔ رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کی دوسری ششماہی کے دوران ٹیوٹا گاڑیوں کی فروخت میں اضافہ کا امکان ہے جس گاڑیوں کی فروخت کے مجموعی حجم میں اضافہ متوقع ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *