بنیادی صفحہ -> پاکستان کی خبریں -> ایم کیو ایم کو تباہی سے بچانا ہے تو اسے 5 فروری کی پوزیشن پر واپس لانا ہوگا
فاروق ستار
فاروق ستار

ایم کیو ایم کو تباہی سے بچانا ہے تو اسے 5 فروری کی پوزیشن پر واپس لانا ہوگا

لاہور(ویب ڈیسک):متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم)پاکستان کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ اگر تنظیم کو تباہی سے بچانا ہے تو پارٹی کو 5 فروری کی پوزیشن پر واپس لانا ہوگا۔کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران ان کا کہنا تھا کہ پارٹی تباہی کے راستے پر چل پڑی ہے اور 25 جولائی کے عام انتخابات کے بعد جو نتائج آئے اس میں ایم کیو ایم پاکستان 17 سے 4 نشستوں پر پہنچ گئی۔انہوں نے کہا کہ ہمارا آئندہ امتحان بلدیاتی انتخابات ہیں، لہذا اگر تنظیم کے کھوئے ہوئے وقار کو واپس لانا ہے تو تمام کارکنوں اور ذمہ داروں کو عزت و احترام کے ساتھ ان کی 5 فروری کی پوزیشن اور ذمہ داریوں پر بحال کرنا ہوگا۔فاروق ستار نے پارٹی کو مشورہ دیا کہ جتنا جلدی ممکن ہو انٹرا پارٹی انتخابات کا انعقاد کیا جائے اور موجودہ صورتحال سے نکلنے کے لیے کارکنوں سے نئی رائے لی جائے۔ان کا کہنا تھا کہ میں ہر سوال کا جواب دینے کو تیار ہوں، میری اس پریس کانفرنس کے نتیجے میں بہادرآباد اور رابطہ کمیٹی کے ساتھیوں کا جواب آئے گا، جس کا جواب دینے کے لیے تیار ہوں۔رہنما ایم کیو ایم نے کہا کہ 23 اگست کو حادثاتی طور پر پارٹی کی سربراہی میں نے لی اور پارٹی کو بچایا لیکن 11 فروری کو مجھ سے یہ سربراہی خالد مقبول صدیقی اور ساتھیوں نے حادثاتی طور پر لے لی اور کارکنوں سے مینڈیٹ نہیں لیا گیا، لہذا موجودہ صورتحال کا تقاضہ ہے کہ انٹراپارٹی الیکشن کرایا جائے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*