لاک ڈاؤن میں اضافہ ہوگا یا نہیں کچھ نہیں کہہ سکتا:اسد عمر

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمرنے کہا ہے کہ معمولات زندگی پر عائد پابندیوں کو آگے بڑھانا ہے یا نہیں؟ اس کا فیصلہ 14 اپریل سے پہلے ہو گا، ابھی کچھ نہیں کہہ سکتا ہوں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق انہوں نے کہا کہ لاک ڈائون کی وجہ سے کورونا وائرس کا پھیلائو کم ہوا ہے اوراگر بندش نہ کی جاتی تو یہ بیماری زیادہ تیزی سے پھیلتی۔انہوں نے کہا کہ قوم کورونا وائرس سے متعلق حکومتی تجاویزپرعمل کررہی ہے لیکن ساتھ ہی انہوں نے شکوہ کیا کہ بعض علاقوں میں لوگ حفاظتی تدابیر پر مکمل عمل درآمد نہیں کررہے ہیں۔وفاقی وزیر اسد عمر کا کہنا تھا کہ نظم وضبط کاسلسلہ جاری رہنا چاہیے تاکہ اس وبا کو مکمل کنٹرول کرسکیں۔ انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ کورونا آئندہ دنوں میں صحت کے نظام کا امتحان بھی بن سکتا ہے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ کورونا کے پھیلائو کو روکنے کے لیے ہمیں کامیابیاں مل رہی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ٹیسٹنگ کی صلاحیت کو ہمیں مزید بڑھانا ہو گا۔پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے وفاقی وزیراسدعمرکا کہنا تھا کہ کورونا کے اقتصادی اثرات سے امیراورغریب دونوں متاثرہورہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم ہسپتالوں کی استعداد کار کے ساتھ ساتھ ملک میں وینٹی لیٹرز کی تعداد بھی بڑھا رہے ہیں۔وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر نے سماجی ورکرز اور سیکورٹی اداروں کو خاص طور پر خراج تحسین پیش کیا۔