بنیادی صفحہ -> ٹیکنالوجی -> ماہرِ کونیات اسٹیفن ہاکنگ کے اعزاز میں یادگاری سکہ جاری

ماہرِ کونیات اسٹیفن ہاکنگ کے اعزاز میں یادگاری سکہ جاری

تاریخ کے ممتاز سائنسداں اور ماہرِ کونیات اسٹیفن ہاکنگ کے اعزاز میں یادگاری سکہ جاری کیا گیا ہے۔ یہ سکہ حکومتِ برطانیہ کی جانب سے ان کی پہلی برسی کے موقع پر 14 مارچ کو جاری کیا گیا ہے۔ نیا چمک دار سکہ انتہائی خوبصورت ہے جسے برطانیہ کی ممتاز ڈیزائنر ایڈوینا ایلس نے ڈیزائن کیا ہے۔ سکے کی پشت پر اسٹیفن ہاکنگ کا نام درج ہے اور اس کے اوپر ہاکنگ کی مشہور مساوات درج ہے جو بلیک ہول میں اینٹروپی کو ظاہر کرتی ہے یعنی بلیک ہول کے اندر انتشار بڑھتا چلاجاتا ہے۔ سب سے نیچے بلیک ہول کو نہایت خوبصورت انداز میں بنایا گیا ہے جو بتدریک پھیل رہا ہے
.
.
.
..
.
.
یہ خبر بھی پڑھیے
.
.
.
تعلیمی سال کے آغاز پر مہنگائی سے طالب علم اور والدین پریشا ن ہیں،حافظ نعیم الرحمن
؛
امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ حالیہ دنوں میں منہگائی کی شرح میں ہوشربا اضافے نے ماضی کے تمام ریکارڈ توڑ دیئے ہیں ، عوام مہنگائی کے بوجھ تلے دب چکے ہیں۔ کوئی چیز ایسی نہیں جس کی قیمت میں اضافہ نہ ہوا ہو ، کتابوں ، کاپیوں اور اسٹیشنری کی قیمتوں میں اضافے کے باعث نئے تعلیمی سال کی آمد پر ہر گھر اور خاندان کے لیے اضافی اخراجات کو پورا کر نا انتہائی مشکل اور تکلیف دہ ہو گا۔ ایک اندازے کے مطابق تعلیمی ضروریات کی اشیاء4 کی قیمتوں میں 20سے 25فیصد تک اضافی بوجھ اْٹھانا پڑے گا ، موجودہ حکومت جو تبدیلی کے دعوے کے ساتھ اقتدار میں آئی تھی عوام کو ریلیف دینے میں مکمل طور پر ناکام ثابت ہوئی ہے۔ حکومت کے تمام وعدے اور دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ہیں۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ پاکستان بیورو شماریات کے اعدادو شمار کے مطابق مارچ کے پہلے ہفتے کے دوران پیٹرول ، ہائی اسپیڈ ڈیزل ، مٹی کا تیل ، ایل پی جی ، پیاز ، زندہ مرغی ، ٹماٹر ،دال ، مونگ ، دال مسور ، دال ماش ، چینی ، گڑ ، لہسن ، کیلے ، خوردنی تیل ، نمک ، تازہ دودہ ، دہی ، آٹا ، چاول ، سبزیوں اور گھی سمیت مختلف اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں غیر معمولی اضافہ ہوا۔ بین الاقوامی جریدے اکانومسٹ کی رپورٹ میں بھی حکومتی اقدامات کے باعث مہنگائی میں اضافے کی نشاندہی کی گئی ہے۔ سابق حکومتوں کی ناکامی ، عوامی غیض و غضب اور نفرت کی بڑی وجہ مہنگائی ہی تھی جس سے نجات کے لیے عوام نے پاکستان تحریک انصاف کے تبدیلی کے نعرے کو پذیرائی دی اور اسے اقتدار میں لائے لیکن اب عوام مایوس ہوتے جارہے ہیں ،حکومت نے بھارتی جارحیت کے خلاف جو اقدامات اْٹھائے ان کی ستائش کی گئی لیکن آئے روز گیس ، بجلی ، پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے نے غریب اور متوسط طبقے کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے اور عام شخص کی قوت خرید نہ ہونے کے برابر رہ گئی ہے۔ وزیر اعظم کو چاہیئے کہ وہ فوری طور پر وفاقی وزیر خزانہ اور حکومت کے مالیاتی مشیروں سے مل کر مہنگائی جیسے سنگین مسئلے کا کوئی حل تلاش کریں۔ ملک بھر میں مہنگائی کے خاتمے کے لیے قابل عمل میکنزم بنائیں تاکہ عوام کو حقیقی معنوں میں ریلیف مل سکے۔تنظیم اساتذہ پاکستان ضلع وسطی کے تحت گولڈن جوبلی کی تقریب مسجد قباء فیڈرل بی ایریا میں منعقد ہوئی۔ ابتداء میں پروفیسر احسان طارق نے درسِ قرآن پیش کرتے ہوئے کہا کہ ایمان کا تقاضہ ہے کہ مسلمان اللہ کے دین کو سر بلند کر نے کے لیے جان و مال سے جہاد کریں۔ اس موقع پر تنظیم اساتذہ کراچی کے صدر شفیق الرحمن عثمانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملکی سلامتی اور یکجہتی کے لیے ملک میں یکساں نظام تعلیم ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ مشرقی پاکستان کی علیحدگی میں بھارت کا کردار انتہائی منفی تھا اور حکومت پاکستان نے اس پر کوئی توجہ نہیں دی۔ تنظیم اساتذہ نے نصابِ تعلیم کے حوالے سے منظم اور مثبت کردار کیا ہے۔ تقریب سے سینئر اساتذہ نے اپنے تاثرات بیان کیے۔ان میں پروفیسر طارق ، پروفیسر سید مظہر حسین ، جاوید میمن ، محمد محمود خان ، محمد علی ، معین عباس مدنی شامل تھے۔ تقریب میں سینئر اساتذہ کو گلدستے پیش کیے گئے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے محمد مظہر نے کہا کہ میں کامیاب تقریب پر شرکاء کا شکریہ ادا کرتاہوں۔ اس تقریب میں صادق موسی ، عمران قاسم ، پروفیسر نہال اختر ، پروفیسر نجیب اللہ بھی موجود تھے جبکہ جنید احمد اور عرفان احمد نے رکنیت کا حلف اْٹھایا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*