کراچی،دہشتگردی اور بھتہ خوری میں ملوث داعش کا دہشتگرد گرفتار

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)کراچی پولیس کے سپیشل انویسٹی گیشن یونٹ (ایس آئی یو) اور وفاقی انٹیلی جنس ادارے نے مشترکہ آپریشن کرتے ہوئے کالعدم تنظیم داعش سے تعلق رکھنے والے دہشت گرد کو گرفتار کر لیا۔

ایس آئی یو کے مطابق مبینہ دہشت گرد کی شناخت سکندر خان کے نام سے ہوئی ہے اور دہشت گرد سے وارداتوں میں استعمال ہونے والا اسلحہ اور دیگر سامان بھی برآمد کر لیا گیا ہے۔پولیس حکام کے مطابق ملزم نے 2019 سے پہلے کالعدم ٹی ٹی پی سے وابستگی کا اعتراف کیا، 2013 میں ملزم کراچی میں دہشتگردی سمیت متعدد مقدمات میں گرفتار ہوا تھا۔ایس آ ئی یو حکام کا کہنا ہے کہ ملزم کو مردان جیل منتقل کیا گیا تھا جہاں سے وہ سزا کاٹنے کے بعد رہا ہوا، ملزم نے 2019 کے دوران بھتہ خوری میں ملوث ہونے کا بھی انکشاف کیا ہے۔

پولیس کے مطابق ملزم نے پی آئی بی تھانے کی حدود میں ڈاکٹر سراج کو بھتے کی پرچی بھیجی، بھتہ نہ دینے پر ملزم سکندر خان نے ڈاکٹر سراج پر فائرنگ کی اور کلینک پر بم سے حملہ کیا۔ایس آئی یو کے مطابق ملزم کے خلاف تھانہ پی آئی بی میں دہشتگردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا، ملزم نے کورنگی میں بھی شہری حلیم سے بھتہ طلب کیا تھا، ملزم کے خلاف کورنگی انڈسٹریل ایریا تھانے میں دہشتگردی سمیت بھتے کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ گرفتار ملزم نے بھتہ خوری اور دیگر سنگین وارداتوں میں ملوث ہونے کا بھی انکشاف کیا ہے، ملزم سے برآمد اسلحہ فارنزک کے لیے بھیجا جا رہا ہے جب کہ گرفتار ملزم کے ساتھیوں کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔