بنیادی صفحہ -> اداریہ،کالم -> جاپانی قوم کی ترقی کا راز۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔!

جاپانی قوم کی ترقی کا راز۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔!

جاپانی قوم کی ترقی کا راز۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔!
مقصود انجم کمبوہ
جاپانی بڑے بردبار، صابر اور دیانتدار ہوتے ہیں نظم و ضبط کے پابند گاڑی میں سوار ہوتے، اترتے وقت اور ٹکٹ حاصل کرتے وقت قطار بناتے ہیں افراتفری اور بد نظمی پیدا نہیں کرتے وقت کے پابند ہیں آج کا کام کل پر چھوڑنے کے قطعی عادی نہیں ہیں بلکہ محنتی اور اپنے کام میں دلچسپی رکھتے ہیں اپنے سینئرز کی عزت و وقار کا خیال رکھتے ہیں ایک دوسرے سے ادارہ جاتی مخاصمت و مخالفت کے قائل نہ ہیں اپنا کام وقت مقررہ پر ختم کرنے کے عادی ہیں جھوٹ سے سخت نفرت کرتے ہیں مخالف پر جھوٹے الزامات لگانے سے گریز کرتے ہیں اپنے دوستوں کے وفادار ہیں بے وفائی انکے ہاں ایک سماجی برائی کی حیثیت رکھتی ہے جھوٹے مقدمات درج کروانا ان کا قطعی شیوہ نہیں پڑوسیوں سے دلی ہمدردی کے خواہاں رہتے ہیں خود داری کو اپنی آن سمجھتے ہیں چوری چکاری سے سخت نفرت کرتے ہیں صحت وصفائی کا بطور خاص خیال رکھتے ہیں جاپانی اپنے گھروں کی گندگی، غلاظت اور کوڑا کرکٹ بازاروں یا گلیوں میں ہرگز نہیں پھینکتے وہ ایسی عادات کو سماجی برائی تصور کرتے ہیں جاپانی اپنی گلیوں کو صاف ستھرا رکھنے میں بڑا اہم کردار ادا کرتے ہیں جاپانی اپنی سوسائٹی میں گہری دلچسپی لیتے ہیں پڑوسیوں کے دروازوں کے آگے پیچھے کوڑا کرکٹ ہرگز نہیں پھینکتے نالیوں اور گلیوں کو باقا عدگی سے صاف ستھرا رکھنے کے جامعہ انتظامات کرتے ہیں عوامی جگہوں پر گندگی کا ڈھیر لگانا نا ممکن ہوتا ہے پبلک ٹرانسپورٹ کی سیٹوں اور فرش پر کاغذوں کے ٹکڑ ے خالی ڈبے وغیرہ اپنے بیگز میں ڈال لیتے ہیں اور مناسب جگہ پر پھینک دیتے ہیں چلتے پھرتے سیر کو جاتے ہوئے جاپانی کھانے کی چیزیں استعمال نہیں کرتے دفتروں سے گھر آتے یا جاتے ہوئے تھوک تک صاف سڑکوں پر نہیں پھینکتے فروٹس کے چھلکے وغیرہ سڑکوں پر پھینکنا سماجی برائی گر دانتے ہیں ڈسٹ بن نہ ملنے پر کوڑا کرکٹ اپنے بیگوں میں ڈال لیتے ہیں ویسٹ کو علیحدہ کرنے کے 44سائنٹیفک طریقے ہیں مشروبات کے ڈبے، پلاسٹک کی بوتلیں وغیرہ سڑکوں پر نہیں پھینکتے جاپانی صفائی کے اصولوں سے مکمل طور پر آگاہی رکھتے ہیں کھیلوں کے میدانوں میں کھیل شروع ہونے سے پہلے یا اختتام پر صفائی ازخود کر لیتے ہیں وہ ایسی عادات کو اپنا فرض سمجھتے ہیں ہمارا دین صفائی کو نصف ایمان کہتا ہے جبکہ ہم ہروہ کام کرتے ہیں جو جاپانی نہیں کرتے انکی ترقی و خوشحالی کا راز انکی محب الوطنی، محنت و مشقت، نظم و ضبط اور دیانتداری ہے اسی لئے جاپان اقتصادی طور پر پوری دنیا کی معشیت پر حکمرانی کے مزے لوٹ رہا ہے اور ہم دھرنوں احتجاجی سیاست کی دلدل میں دھنستے جارہے ہیں ہم اخلاقی طور پر متزلزل اور سیاسی طور پر بد نظمی کا شکار ہیں ہم اس قدر محب الوطن ہیں کہ فوج اور عدلیہ کوہیچ تصور کرتے ہیں عدلیہ کے فیصلوں کو خاطر میں نہیں لاتے قانون کو پاؤں تلے روندتے ہیں اور عوام کو بد نظمی پر تیار کرتے ہیں بے صبری اور بد دیانتی ہمارے خون میں رچی بسی ہے سیاستدان ایک دوسرے سے دست و گریبان نظر آتے ہیں قوم تقسیم ہو چکی ہے عالم دین ٹی وی پر خواتین اینکر ز سے بحث و مباحثہ کرتے نظر آتے ہیں ہم وقت کی بے قدری کے ماہرہیں وقت کو برباد کرنے میں ہمارا کوئی ثانی نہیں ایک دوسرے پر جھوٹے الزامات کی بھر مار ہمارا شیوہ بن چکا ہے ہماری شخصیت بکھر چکی ہے صحافت و سیاست غلاظت و مخاصمت سے بھری پڑی ہے ہمارے ٹی وی چینل بے مہار ہو چکے ہیں وہ ہمیں لڑا رہے ہیں اور ہم لڑ رہے ہیں بھائی چارہ ختم ہوتا جارہا ہے مفاد پرستی کی آگ بھڑک رہی ہے اسکو بجھانے کی بجائے تیل چھڑکنے کا کام جاری ہے اس ساری صورتحال کا فائدہ ہمارے دشمنوں کو پہنچ رہا ہے 14اگست کو ہم 70واں یوم آزادی منا چکے ہیں اور ہر سال تجدید عہد کرتے ہیں آزادی کا قرض چکانے کی باتیں کرتے ہیں کالم، مضامین اور تقریریں کر کے عوام کا خون گرم کرنے کی ناکام کوشش کرتے ہیں جمہوری و پارلیمانی نظام کے استحکام کے وعدے کرتے ہیں کرپشن و بد عنوانی سے پاک معاشرے کے قیام کے عہد کئے جاتے ہیں مگر افسوس کہ یہ سب کچھ عارضی اور منافقت پر مبنی ہوتا ہے ہم عوام کو کچھ نہیں دے پائے مہنگائی و بے روزگاری آج بھی عروج پر ہے اس کے خاتمے کے لئے ٹھوس اور جامعہ منصوبہ بندی نہیں ہو پائی سیاست دان آج تک یہ فیصلہ بھی نہیں کر پائے کہ پارلیمانی یا صدارتی نظام بہتر ثابت ہوگا جبکہ آج تک پارلیمانی نظام عوام کے دکھوں اور دردوں کا مداوا کرنے میں بری طرح ناکام رہا ہے ہمارے حکمرانوں نے آج تک جتنے بھی عہد و پیماں کئے ہیں وہ ہوا میں معلق ہیں کوئی مثبت حل سامنے نہیں آسکا جاپانی قوم نے دو عالمی جنگوں میں اپنا سب کچھ لٹا دیا بربادی خریدی معاشی طور پر مفلوج ہوئے مگر یہ سب کچھ ہونے کے باوجود جاپانی نہ صرف اپنے پاؤں پر کھڑے ہیں بلکہ ترقی پذیر ممالک کو پاؤں پر کھڑ ا کرنے کی جدوجہد میں بھی مصروف نظر آتے ہیں اللہ تبارک تعالیٰ سے دعا ہے کہ و ہ ہماری مدد فرمائے اور ہمارے دلوں سے بغض و کینہ کے جراثیموں سے پاک کردے آمین ثمہٰ آمین۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*