بنیادی صفحہ -> ٹیکنالوجی -> خاتون نے روبوٹ کی مدد سے بچے کو جنم دیدیا

خاتون نے روبوٹ کی مدد سے بچے کو جنم دیدیا

لاہور(ویب ڈیسک) میڈیکل کی دنیا میں سائنسدانوں نے ایک اور تاریخی سنگ میل عبور کر لیا ہے۔ سویڈن میں ایک خاتون میں روبوٹ کے ذریعے رحم ٹرانسپلانٹ کیا گیا تھاجس نے اب ایک صحت مند بچے کو جنم دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق : یہ میڈیکل سائنس میں پہلا موقع ہے کہ روبوٹ کے ذریعے کسی خاتون کے جسم میں بچے دانی ٹرانسپلانٹ کی گئی اور اس خاتون نے صحت مند بچے کو جنم دیا۔ اس خاتون کے ہاں 36ہفتے کے حمل کے بعد آپریشن کے ذریعے بچے کی پیدائش ہوئی۔

پیدائش کے وقت بچے کا وزن 2.9کلوگرام تھااور وہ مکمل صحت مند تھا۔2017ءمیں ساہلگرینسکا یونیورسٹی ہسپتال کے ماہرین نے اس خاتون کے جسم میں روبوٹ کے ذریعے بچے دانی ٹرانسپلانٹ کی تھی اور انہی ماہرین نے اس خاتون کے حاملہ ہونے کا بھی اعلان کیا تھا۔ یہ خاتون بانجھ تھی اور اس میں ایک حادثے کا شکار ہونے والی خاتون کی بچے دانی ٹرانسپلانٹ کی گئی تھی اور بعد ازاں آئی وی ایف (مصنوعی طریقہ افزائش)کے ذریعے یہ خاتون حاملہ ہوئی۔ رحم ٹرانسپلانٹ ہونے کے 10ماہ بعد ماہرین نے لیبارٹری میں بچے کا ایمبریو بنا کر سرجری کے ذریعے اس کے جسم میں رکھا۔ خاتون میں بچے دانی ٹرانسپلانٹ کرنے اور پھر آئی وی ایف کے ذریعے اسے ماں بننے میں مدد دینے والی ماہرین کی ٹیم کے سربراہ پروفیسر میٹس برین سٹرام کا کہنا تھا کہ ”آج طبی تاریخ کا اہم ترین دن ہے۔ آج یہ ثابت ہو گیا ہے کہ روبوٹ کی مدد سے سرجری کرنے کی تکنیک قابل عمل طریقہ ہے۔“

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*