بنیادی صفحہ -> سپورٹس کی خبریں -> پی ایس ایل ٹائٹل مقابلے میں شرکت سے معذرت
سیٹھی

پی ایس ایل ٹائٹل مقابلے میں شرکت سے معذرت

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر اپنے پیغام میں نجم سیٹھی نے کہاکہ میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا مشکور ہوں جنھوں نے مجھے پاکستان سپر لیگ کے ٹائٹل مقابلے میں مدعوکیا تاہم مجھے بڑا افسوس ہے کہ بیرون ملک ہونے کی وجہ سے نہیں آسکوں گا۔
.
.
.
.
.
یہ خبر بھی پڑھیئے
.
.
.
ویزہ انٹرنیشنل کی ای کامرس سمٹ کے دوسرے ایڈیشن کی میزبانی
.
ڈیجیٹل ادائیگیوں کے عالمی لیڈ ر Visa (NYSE:V) نے گزشتہ سال افتتاحی سمٹ کی کامیابی کے بعد مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقا کے علاقے (MENA) کے لیے اپنی ای کامرس سمٹ کے دوسرے ایڈیشن کی میزبانی کی ۔Visa سمٹ نے "Capturing the Digital Consumer” کے اپنے تھیم کے ساتھ آج اور کل کے ڈیجیٹل کنزیومرز کو راغب کرنے کی خاطر موثر ای کامرس آفرنگز پر زور دینے کے لیے اس علاقے میں کامرس کے ارتقا پر غور کی غرض سے انڈسٹری لیڈرز اور ماہرین کو ایک جگہ اکٹھا کیا۔مندوبین نے پینل کی شکل میں گفتگو کے ایک سلسے، پریزنٹیشنز اور سوال جواب کے ذریعےMENA میں ای کامرس کے مستقبل اور معاشی ترقی کی رفتار تیز کرنے میں اس کے اہم کردار پر غور کیا ۔پینل کی شکل میں بات چیت کے دوران اس امر پر زور دیا گیا کہ صارفین کی ارتقا پذیر امیدوں سے کس طرح یہ سیکٹر تیزی سے ایک نئی شکل اختیار کر رہا ہے اور اس پر اثرات مرتب ہو رہے ہیں ، میکرو اکنامک حرکیات تبدیل ہو رہی ہیں ،نئی ٹیکنالوجیز دریافت ہو رہی ہیں اور گنجائش میں تنوع پیدا ہو رہا ہے۔Visa نے بامقصد بات چیت اور خیالات کے ساتھ سیشن کو پرجوش بنانے کے لیے ایمازون، نون، فیس بک،نیٹ فلکس،Spotify ،دراز، ڈلیوری ہیرو،Paypal ،اور Almosafer سمیت مرچنٹس، ایشوئر بینکس، پیمنٹ پلیٹ فارم پرووائیڈرز اور ڈیپارٹمنٹ آف اکنامک ڈیویلپمنٹ(DED) کے حکومتی نمائندوں کے ساتھ ممتازعلاقائی، گلوبل ای کامرس پلےئرز کو ایک جگہ اکٹھا کیا۔Visa کے جنرل مینجر برائے مشرق وسطیٰ و شمالی افریقا،Marcello Baricordi نے کہا کہ ” ہمارے اعدادو شمار ظاہر کرتے ہیں کہ 2017 کے مقابلہ میں 2018 میں NENA ای کامرس نے دو اعداد میں ترقی ریکارڈ کی ،ادائیگیوں کی مقدار میں 27% اور آن لائن ٹرانزیکشنز میں 44% اضافہ ہوا ۔اور امید ہے کہ 2022 تک مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقا میں آن لائن شاپنگ میں اندازاً تین گنا اضافہ ہو گا، ای کامرس تجربے کو جدید بنا تے ہوئے جو معاشی موقع ملے گا وہ مرچنٹس اور بینکوں کے لیے بہت زیادہ ہو گا۔ہمیں علم اور کارکردگی کو یکجا کرتے ہوئے ہمیں اس امر کی تشکیل نو پر توجہ مرکوز کرنی چاہیئے کہ آج کے کنزیومر ز کو زیادہ نا محسوس ،فائدہ مند اور محفوظ تجربات کی پیشکش کرتے ہوئے ان کے لیے آن لائن اور موبائل شاپنگ کا مطلب کیا ہے” ۔Visa ،مرچنٹس، شراکت دار مالیاتی اداروں اور حکومتوں کے قریب رہ کر کام کرتا ہے اور انھیں اس قابل بناتا ہے کہ وہ نئے تجارتی مواقع حاصل کریں اور ایسے نا محسوس کنزیومر سلوشنز وضع کریں جوVisa کے APIs (Application Program Interface) برانڈ، اور دنیا کے سب سے بڑے پیمنٹ پراسیسنگ اور قبول کرنے والے نیٹ ورک سے ہم آہنگ ہوں۔Baricordi نے مزید کہا کہ” Visa کی مہارت ، جدید ڈیجیٹل سلوشنز ،تجزیاتی علم اور مرچنٹس کے سب سے بڑے عالمی نیٹ ورک کو بروئے کار لاتے ہوئے ہم بہترین کنزیومر تجربات کو وضع اور فراہم کرنے کے لیے اپنے مرچنٹس اور شراکت دار بینکوں کی مدد کر سکتے ہیں۔مزید برآں ، Visa MENA ای کامرس سمٹ جیسے ایونٹس کے ذریعے ہم سیکھنے اور تعاون کرنے کے ماحول کو مضبوط بنانے کا عمل جاری رکھنا چاہتے ہیں تاکہ ای کامرس کے لیے مواقع میں اضافہ ہو اور تمام پلےئرز اس سے فائدہ اٹھائیں” ۔Visa ای کامرس سمٹ نے ای کامرس ایکو سسٹم میں کام کرنے والے اہم پلےئرز بہترین طور طریقے سلوشنز اور بزنس ماڈلز شےئر کرنے میں تعمیری کردار ادا کیا تاکہ ای کامرس کی ترقی تیز ہو۔ایک بہت بڑا فائدہ اس بات کو اجاگر کرنا تھا کہ موثر اور کسٹمائزڈ ای کامرس آفرنگز وضع کرتے ہوئے ڈیجیٹل کنزیومر کے رویے اور توقعات اور طور طریقوں کو پوری طرح سے سمجھا جائے تاکہ ایسے نا محسوس اور محفوظ تجربات فراہم کیے جا سکیں جن کی ڈیجیٹل کنزیومرز امید کرتے ہیں۔ڈیپارٹمنٹ آف اکنامک ڈیویلپمنٹ(DED) میں کنزیومر پروٹیکشن ڈیپارٹمنٹ کے ڈائریکٹر احمد الزابی نے کہا کہ” اس سمٹ نے آن لائن ٹرانزیکشن میں کنزیومر رویے اور ان کی توقعات کے بارے میں مفید معلومات دیں۔اس قسم کی نشستوں سے ہم یہ سیکھتے ہیں کہ یو اے ای میں نقد رقم سے ڈیجیٹل ادائیگیوں کی طرف جانے کی رفتار تیز کرنے میں سیکیورٹی اہم محرک ہے ۔کنزیومر پروٹیکشن ڈیپارٹمنٹ کنزیومرز کو ان کے حقوق کے بارے میں آگاہ کرنے اور یہ بتانے کے لیے کام کر رہا ہے کہ وہ ڈیجیٹل طریقے سے لین دین کرتے اس بات کو یقینی بناتے ہوئے کہ وہ مصدقہ پلیٹ فارم ہی استعمال کر رہے ہیں، ہوشیار رہیں ۔Visa کی طرف سے اس قسم کے ایونٹس جو ای کامرس انڈسٹری کے لیڈروں کو اکٹھا کرتے ہیں ،ڈیجیٹل ادائیگیوں میں کنزیومر کا اعتماد پیدا کرنے کے لیے ہماری کوششوں سے مطابقت رکھتے ہیں تاکہ وہ آئن لائن ہوں یا کسی اسٹور میں خریداری کر رہے ہوں ،اعتمادکے ساتھ لین دین کر سکیں” ۔دراز کے مینجنگ ڈائریکٹر، احسان سایا نے کہا کہ ” Visa ای کامرس سمٹ نے ڈیجیٹل کنزیومرکی ارتقاپذیر ضروریات کے بارے میں اس علاقے کے اعلیٰ دماغوں کی سے بہترین معلومات فراہم کیں۔ہمیں ای کامرس کمپنیوں ، بینکوں اور پیمنٹ پلیٹ فارمز کی حیثیت سے مل جل کر کام کرنا چاہیئے تاکہ مارکیٹ کو کریڈٹ کارڈز کے استعمال کے فائدوں کے بارے میں آگاہ کیا جا سکے۔علاقے کے ای کامرس ایکو سسٹم اور مل جل کر سوچنے اور مسائل کا حل تلاش کرنے میں ایک زبردست پلیٹ فارم فراہم کرنے میں اس قسم کے شاندار ایونٹس انتہائی اہم ہیں” ۔Almosafer کے ای وی پی، مزمل اے حسین نے”building Consumer eCommerce Behavior” کے پینل میں بات چیت کرتے ہوئے اس امر کو اجاگر کیا کہ” مارکیٹ میں کنزیومر کی ضروریات اور رویے تیزی سے تبدیل ہو رہے ہیں اور کامرس کے لیے ایکو سسٹم ان حساس ضروریات کو پورا کرنے کے لیے وضع کرنا ہو گا۔اس کا واحد موثر طریقہ یہ ہے کہ بھرپور تعاون کیا جائے۔Visa ای کامرس سمٹ مواقع اور چیلنجز پر بات چیت کے لیے نہ صرف انڈسٹری لیڈرز کے لیے ایک عظیم موقع ثابت ہوئی بلکہ اس نے اسٹیک ہولدرز کے لیے اکٹھے آگے بڑھنے اور امکانی سلوشنز تلاش کرنے کے لیے بھی ایک پلیٹ فارم مہیا کیا۔اس ایونٹ نے ایک بار پھر یہ ظاہر کیا کہ Visa آن لائن ادائیگیوں کے لیے بہتر کنزیومر تجربے کی خاطر کس طرح کام کر رہا ہے۔یہ ایک زبردست سمٹ تھی اور مجھے اس کا حصہ بن کر خوشی ہوئی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*