بنیادی صفحہ -> دنیا کی خبریں -> بچے کی چھوٹی سی غلطی ، آئی پیڈ 48 سال تک لاک ہو گیا

بچے کی چھوٹی سی غلطی ، آئی پیڈ 48 سال تک لاک ہو گیا

لاہور(ویب ڈیسک) بچے اگر خاموش ہوں تو پھر جا کر جائزہ لے لیں کہ کہیں یہ خاموشی کسی بڑے طوفان کا پیش خیمہ تو نہیں۔ خصوصاً جب بچے کے ہاتھ میں آپ کا موبائل، آئی پیڈ یا کوئی دوسرے جدید آلات ہوں۔

ایسا ہی کچھ ہوا دی نیو یارکر میں بطور رائٹر کام کرنے والے ایوان اوسنوس کے ساتھ، جنہوں نے ایک ٹوئٹ میں اپنی مشکل بیان کی اور اس مشکل میں ایوان کو ڈالنے والا کوئی اور نہیں بلکہ ان کا بیٹا ہی تھا۔ مشکل یہ ہے کہ ایوان کے 3 سالہ بیٹے نے ان کا آئی پیڈ کھولنے کی کوشش کی، ناکامی کی صورت میں اس نے یہ کوشش اتنی بار دہرائی کہ آئی پیڈ لاک ہو گیا۔ آپ لوگ سوچ رہے ہوں گے کہ یہ ایسی کونسی مشکل ہے، مشکل یہ ہے کہ اسکرین پر ابھرنے والے پیغام میں بتایا گیا کہ اب دوبارہ کوشش 25,536,442 منٹوں کے بعد کی جائے۔ ایوان نے اسکرین شاٹ ٹویٹ میں شیئر بھی کیا ہے۔

بتائے گئے منٹوں کا حساب کیا جائے تو یہ 48 سال سے بھی زیادہ کا عرصہ بنتا ہے یعنی ایوان کا آئی پیڈ 2067 میں کھل سکے گا۔ آئی پیڈ لاک آوٹ ایپل ڈیوائسس کا حفاظتی فیچر ہے جو بار بار غلط پاس ورڈ لگانے سے حرکت میں آجاتا ہے۔ جتنی دفعہ غلط پاس ورڈ لگایا جائے گا اتنی دفعہ ہی لاک آؤٹ ٹائم بڑھتا چلا جائے گا۔ ٹوئٹ کے جواب میں ایوان کو بہت سے مشورے موصول ہوئے جن میں کچھ سنجیدہ نوعیت کے تھے اور کچھ بچکانہ لیکن ان کے کام کوئی بھی نہ آسکا۔ ایپل کا اس حوالے سے آئی پیڈ کو ری اسٹور کر دینے کا مشورہ ہے لیکن اس کے نتیجے میں ایوان بیک اپ نہ ہونے کی صورت میں آئی پیڈ میں محفوظ تمام ڈیٹا سے ہاتھ دھو بیٹھیں گے۔

دوبارہ کیے گئے ٹوئٹ میں ایوان کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے آئی پیڈ کو ری اسٹورنگ کے لیے ‘ڈیوائس فرم ویئر اپ ڈیٹ’ کے موڈ میں ڈال دیا ہے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*