بنیادی صفحہ -> اداریہ،کالم -> مولانا فضل الرحمٰن کیساتھ اصل میں کس نے ہاتھ کیا ہے ؟

مولانا فضل الرحمٰن کیساتھ اصل میں کس نے ہاتھ کیا ہے ؟

لاہور(ویب ڈیسک):معروف صحافی اورتجزیہ نگارمظہرعباس نے اپنے کالم میں انکشاف کیا ہے کہ آزادی مارچ میں مولانا فضل الرحمٰن کیساتھ کس نے اصل میں ہاتھ کیا ہے. انہوں نے وزیر اعظم عمران خان سے استعفیٰ لینے اور ملک میں تازہ انتخابات کے اعلان کیلئے اسلام آباد کی تنہا پرواز لی۔ دو ہفتوں میں انہیں احساس ہوگیا کہ ان کے ساتھ ہاتھ ہو گیاہے جیسا کہ نا تو انہیں ان کے حزب اختلاف کے اتحادی بھرپور قوت کے ساتھ ملے اور نا ہی حکومت بے چین نظر آئی۔

مظہر عباس نے مزید انکشاف کیا کہ جس طرح سے مولانا نے چوہدری شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الٰہی سے مذاکرات کئے، اس سے بھی اس بات کا اشارہ ملتا ہے کہ ان کے ساتھ ہاتھ ہوگیا اور آخر میں وہ کوئی قابل قبول ’فیس سیونگ چاہتے تھے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ چوہدریوں نے مولانا کو ملاقاتوں میں واضح طور پر بتادیا تھا کہ عمران کے اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ بہترین تعلقات ہیں اور یہی وجہ تھی کہ جس کی وجہ سے وہ مطمئن دکھائی دئیے اور اپنی جماعت کے رہنماؤں کو کہا کہ وہ پریشان نہ ہوں، ہم کہیں نہیں جارہے۔ مظہر عباس کا مزید کہنا تھا کہ یہ صرف مولانا ہی جانتے ہیں کہ انہیں اس صورتحال میں کس نے دھکیلا اور کس نے ان کے ساتھ ہاتھ کیا لیکن اگر کسی نے واقعی اس حالیہ سیاسی گیم سے کچھ حاصل کیا ہے تو وہ گجرات کے چوہدری ہیں جو ناصرف مولانا سے نمٹے بلکہ نواز شریف کے بیرون ملک جانے کیلئے بھی پوزیشن لی۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*