Buy website traffic cheap

بیروزگار

بلاول بھٹو کے نئے مطالبے نے حکومت کو مشکل میں‌ ڈال دیا

اسلام آباد(آن لائن) پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ دھاندلی کے خلاف پارلیمانی کمیشن بننا خوش آئند ہے مگر ہمارا مطالبہ تھا کہ مشترکہ پارلیمانی کمیٹی ہو حکومت اگر ڈرتی نہیں تو اپوزیشن کے مطالبات تسلیم کیوں نہیں کرتی ۔ قومی اسمبلی کے مینجمنٹ اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ اسد عمر کی تقریر متاثر کن نہیں تھی منی بجٹ کی تقریر اسد عمر کی اپوزیشن کے دور میں کی گئی تقاریر کی عکاسی نہیں کرتی ۔ مزیر رائے منی بجٹ پڑھنے کے بعد دوں گا انہوں نے کہا کہ دھاندلی کے خلاف پارلیمانی کمیٹی بننا خوش آئند ہے تاہم ہمارا مطالبہ تھا کہ جوائنٹ پارلیمانی کمیٹی ہو لیکن اس پر حکومت راضی نہیں ہوئی اگر حکومت ڈرتی نہیں تو اپوزیشن کے مطالبات کیوں نہیں مانتی ۔ حکومت نے دھاندلی کو نظر انداز کیا تو اپوزیشن حکمت عملی تیار کرے گی اور ہم کسی صورت بھی حکومت کو دھاندلی کے خلاف تحقیقات سے پیچھے نہیں ہٹنے دیں گے ۔

یہ خبر بھی پڑھیں؛ ضمنی انتخابات میں‌ جیت مسلم لیگ کی ہی ہوگی، حمزہ شہباز نے بڑا اعلان کردیا
لاہور (خصوصی رپورٹر) پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنماءحمزہ شہباز شریف نے کہا ہے کہ پنجاب بھر میں ہونے والے ضمنی انتخابات کے حوالے سے پاکستان مسلم لیگ ن نے تمام تیاریاں مکمل کرلی ہیں اور ان انتخابات میں جیت ن لیگ کی ہوگی گزشتہ روز اندرون موچی دروازہ کے دورے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حمزہ شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان کی پوری قوم پوچھ رہی ہے کہ انہوں نے الیکشن 2018ءمیں اپنے ووٹ تو شیر کو ڈالے لیکن جعلی مینڈیٹ والے کہاں سے سامنے آگئے ہیں انہوں نے کہا کہ سچ سچ ہے اور سچ کو زیادہ دیر نہیں چھپایا جاسکتا گزشتہ چند دنوں سے عوام نے حکومت کا تماشہ خود دیکھ لیا ہے انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ ن انتظار کریگی کہ وزیراعظم عمران خان کا اصلی چہرہ قوم دیکھ لے اور قوم جان لے عمران نیازی کے دعوے کیا تھے اور وہ کیا کررہے ہیںانہوں نے کہا کہ لوگوں سے وعدہ اللہ کی مخلوق سے وعدہ ہوتا ہے اور جب کوئی بھی حکمران اللہ کی مخلوق سے وعدہ خلافی کرے تو عوام خود اس کو گریبان سے پکڑ لیتی ہے حمزہ شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومت نے گزشتہ پانچ برسوں کے دوران پاکستان کے عوام کی خدمت کی اوربار ہ ہزار میگا ووٹ بجلی پیدا کر کے لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ کیا اور آج حکمرانوں کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے دوبارہ لوڈشیڈنگ شروع ہوگئی ہے انہوں نے کہا کہ جو کام کرتا ہے اس کا کام کا جادو سر چڑھ کر بولتا ہے بہت جلد ثابت ہوجائیگا کہ موجودہ حکمران کہتے ہیں اور کرتے کیا ہیں۔