Buy website traffic cheap

فواد چوہدری

بھارتی آرمی چیف کے بیان پر فواد چوہدری نے بھی بھارت کو دوٹوک جواب دیدیا

اسلام آباد (ویب‌ڈیسک) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے بھارتی آرمی چیف کے بیان پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے امن کے لیے پہلے ہاتھ بڑھایا تھا، بھارتی آرمی چیف کا بیان انتہائی نامناسب ہے۔ہم امن کی بات کرتے ہیں اور بھارتی آرمی چیف جنگ کی بات کر رہے ہیں پاکستان اور بھارت ایٹمی طاقتیں ہیں جنگ نہیں ہو سکتی ہم تو امن کے لیے کھڑے ہیں اپنی کوششیں کرتے رہیں گے بھارتی آرمی چیف کوسمجھنا چاہیے کہ وہ بھارتیا جنتا پارٹی کے سربراہ نہیں، بھارتی آرمی چیف کی سیاسی جماعت کے آلہ کار نہ بنے۔ آرمی چیف کو سیاسی آلہ کار کے طور پر بیان بازی سے گریز کرنا چاہیے۔بھارتی آرمی چیف کے بیان پر اپنے رد عمل میں وفاقی وزیر نے کہا کہ پوری دنیا دیکھ رہی ہے کہ پاکستان کا کردار کیا ہے اور بھارت کا کردار کیا ہے ہندوستان کے آرمی چیف کو سمجھنا چاہیے کہ وہ آرمی چیف ہیں بی جے پی کے جنرل سیکرٹری نہیں ہیں بھارتی فوج کے سربراہ کو خود کو سیاسی جماعت کے آلہ کار کے طور پر نمایاں کر رہے ہیں جبکہ پی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اطلاعات نے کہا کہ پوری دنیا اور خطے کی ضرورت ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان تلخیاں حد سے نہ بڑھیں جنگ کا کوئی فائدہ نہیں دونوں ملکوں کو امن کیطرف بڑھنا چاہیے ہم اب بھی امن کا دامن تھامے ہوئے ہیں بھارت کو بھی ایسا سوچنا چاہیے تالی دونوں ہاتھوں سے بجتی ہے کیونکہ دونوں ملکوں کی کروڑوں زندگیوں کا مسئلہ ہے دونوں ممالک کی نصف سے زائد آبادی غربت کی لکیر سے نیچے زندگی بسر کر رہی ہے ہم بھارت کے ساتھ معاشی ترقی کے لیے بات کرنا چاہتے ہیں پوری دنیا دیکھ رہی ہے امن کا کون خواہاں ہے اورجنگ کون چاہتا ہے ہم امن کے لیے کھڑے ہیں امن کی کوششیں کرتے رہیں گے،بھارتی آرمی چیف کی دھمکیوں کے جواب میں میجر جنرل (ر)اعجاز اعوان نے کہا کہ بھارت ہمیں کیا جواب دے گا؟ بھارت نے زبانی سرجیکل اسٹرایئک کی تھیں۔سابق آرمی چیف جنرل (ر)اسلم بیگ کا بھارتی چیف کے بیان پر رد عمل میں کہنا تھا کہ بھارتی آرمی چیف کی دھمکی دراصل ان کو لاحق بد ہضمی ہے، بھارت کو معلوم ہونا چاہیے کہ ہمارے پاس ان کا موثر علاج ہے، بیان سے لگتا ہے کہ وہ نارمل پوزیشن میں نہیں تھے۔ بھارت کشمیر میں پیدا شدہ صورتحال پر بوکھلاہٹ کا شکار ہے اور کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لیے بیانات کے گولے چلا رہا ہے۔اس سے قبل مذاکرات کی منسوخی پر وزیراعظم عمران خان نے بھارتی رویے پر مایوسی کا اظہار کیا تھا اور اپنے ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ بڑے عہدے پر بیٹھے چھوٹے شخص کی سوچ چھوٹی ہی رہتی ہے۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے دوحا ائیرپورٹ پر امریکہ روانگی سے پہلے بات کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کا بہانے تلاش کرکے ملاقات سے فرار درست رویہ نہیں ہے ،سینئر دفاعی تجزیہ کار امجد شعیب نے کہا کہ بھارتی آرمی چیف اپنی عوام کو بے وقوف بنا سکتے ہیں ہمیں نہیں، بھارت نے پاکستان کے خلاف نفرتیں پیدا کی ہیں ۔نجی ٹی وی جیو نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے امجد شعیب کا کہنا تھا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں ظلم کی انتہا کردی ہے جبکہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں ظلم کی انتہا کردی ہے ۔انہوں نے کہاکہ بھارت کی مثال کھسیانی بلی ، کھمبا نوچے کے جیسی ہے، پاک فوج تیار ہے اگر بھارت نے کارروائی کی تو بھر پور جواب دیا جائے گا۔بھارتی آرمی چیف اپنی عوام کو بے وقوف بنا سکتے ہیں ہمیں نہیں ۔