Buy website traffic cheap

کشتی

تنزانیہ میں کشتی ڈوبنے سے 136 افراد ہلاک ،102کو بچا لیا گیا

ڈوڈوما (ویب ڈیسک) مشرقی افریقی ملک تنزانیہ میں کشتی ڈوبنے کے نتیجے میں 136 افراد ہلاک ہوگئے جبکہ 102 افراد کو بچالیا گیا۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق حادثہ وکٹوریہ جھیل میں پیش آیا جہاں مسافروں سے بھری کشتی الٹ گئی جس کے نتیجے میں 136 افراد ہلاک ہوگئے۔حکام کے مطابق ڈوبنے والے 102 افراد کو زندہ بچا لیا گیا، کشتی میں 300 افراد سوار تھے لاپتا افراد کے زندہ بچنے کے امکانات تقریبا معدوم ہوگئے ۔واضح رہے کہ تنزانیہ ، یوگینڈا اور کینیا کے اطراف واقع اس جھیل میں حادثات پہلے بھی ہوتے رہے ہیں اور اس کی زیادہ تر وجہ گنجائش سے زائد افراد کا کشتی میں سوار ہونا اور کشتیوں کی خستہ حالی ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں؛ فلسطینی شاعرہ کی قید کی سزا پوری ہونے سے قبل رہائی
مقبوضہ بیت المقدس(یواین پی )شمالی فلسطین کے مقبوضہ شہر الرینہ سے تعلق رکھنے والی فلسطینی شاعرہ اور دانشور دارین طاطور کو پانچ ماہ قید کی سزا پوری ہونے سے قبل ہی صہیونی حکام نے رہا کر دیا۔ میڈیا کے مطابق دارین طاطور کو اسرائیلی فوج نے گذشتہ اگست میں حراست میں لیا تھا اور اسرائیلی مظالم کے خلاف شاعری کرنے اور فلسطینی تحریک آزادی کو مہمیز دینے کے الزام میں گرفتار کرکے انہیں پانچ ماہ قید کی سزا سنائی تھی۔گذشتہ روز 36 سالہ طاطور کے والد نے بتایا کہ ان کی بیٹی کو سزا پوری ہونے سے قبل ہی رہا کردیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم اسرائیلی حکام کے اس فیصلے پرحیران ہیں۔خیال رہے کہ 36 سالہ طاطور کو اس سے قبل اکتوبر 2015 کو بھی اسرائیل مخالف نظمیں لکھنے اور انہیں سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔اس کی ایک نظم مزاحمت اے میری قوم مزاحمت جاری رکھ نے کافی شہرت پائی تھی صہیونی حکام نے انہیں حراست میں لے لیا تھا۔نومبر 2015 اسرائیلی پراسیکیوٹر جنرل نے دارین طاطور پر دہشت گرد تنظیم کی حمایت کی پاداش میں فرد جرم پیش کی گئی۔جنوری دو ہزار سولہ میں شاعرہ طاطور کو گھر پر نظر بند رکھنے کی سزا سنائی تھی۔