Buy website traffic cheap

حسن

حسن عسکری نگران وزیراعلیٰ پنجاب، ن لیگ نے تقرری کو مسترد کردیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) الیکشن کمیشن نے نگران وزیر اعلی پنجاب کے نام کا اعلان کردیا،پروفیسر حسن عسکری رضوی نگران وزیر اعلی پنجاب ہو ں گے،ان کا نام اپوزیشن کی جانب سے نامزد کیا گیا تھا،جمعرات کو الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن اختر نذیر نے کہا کہ نگران وزیر اعلی پنجاب کا معاملہ 6جون کو الیکشن کمیشن ریفر ہوا تھا،آج الیکشن کمیشن میں اجلاس ہوا جس میں باہمی مشاورت کے بعد متفقہ طور پر فیصلہ کیا گیا کہ نگران وزیر اعلی پنجاب پروفیسر حسن عسکری رضوی ہوں گے۔ انہوں نے کہا پروفیسر حسن عسکری کا شمار پاکستان کی نامور علمی شخصیات میں ہوتا ہے اور وہ ملکی اور غیر ملکی درسگاہوں میں شعبہ علم و تدریس سے منسلک ہیں، اس کے علاوہ وہ مختلف اخبارات، جرائد اور ٹی وی چینلز پر اہم موضوعات پر ایک مایہ ناز مبصر تصور کیے جاتے ہیں۔الیکشن کمیشن نے نگران وزیر اعلی بلوچستان کے نام کا اعلان بھی کردیا،علاﺅ الدین مری نگران وزیر اعلی بلوچستان ہو ں گے،ان کا تعلق بلوچستان کے ضلع مستونگ سے ہے،جمعرات کو الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن اختر نذیر نے کہا کہ نگران وزیر اعلی بلوچستان کے حوالے سے آج صبح چار نام الیکشن کمیشن کو موصول ہوئے جس کے بعد ایک بجے الیکشن کمیشن میں اجلاس ہوا جس کی صدارت چیف الیکشن کمشنر نے کی،اجلاس میں باہمی مشاورت کے بعد متفقہ طور پر فیصلہ کیا گیا کہ نگران وزیر اعلی بلوچستان علاﺅ الدین مری ہوں گے،انہوں نے کہا کہ علاﺅ الدین مری کا تعلق بلوچستان کے ضلع مستونگ سے ہے انہوں نے گریجویشن کے بعد مفاد عامہ کے کاموں میں حصہ لینا شروع کیانامزد نگران وزیراعلیٰ پنجاب حسن عسکری نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن نے جو تاریخ دی ہے اس میں انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنائیں گے‘ محدود وقت میں عوام کی فلاح پر بھی توجہ دیں گے‘ کابینہ محدود رکھیںگے۔ جمعرات کو نامزد نگران وزیراعلیٰ پنجاب حسن عسکری نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کوشش ہوگی کہ کسی جماعت کو شکایت نہ ہو جو بھی کام ہوگا قانون کے مطابق ہوگا۔ محدود وقت میں عوام کی فلاح پر بھی توجہ دیں گے۔ الیکشن کمیشن نے جو تاریخ دی ہے اس میں انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنائیں گے کابینہ محدود رکھیں گے دوسری جانب ترجمان الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ ا لیکشن کمیشن کسی دبا میں آکر کام نہیں کرتا، حسن عسکری کا نام متفقہ طور پر فائنل کیا،ہم نے آئین و قانون کے تحت جانا ہے اس کے علاوہ اور کوئی راستہ نہیں، حسن عسکری کے نام کا فیصلہ بھی آئین و قانون کے دائرے میں ہو۔ جمعرات کو ترجمان الیکشن کمیشن الطاف خان نے پنجاب کے نگران وزیراعلی ک کیلئے (ن)لیگ کی جانب سے حسن عسکری کا نام مسترد کیے جانے اور فیصلے پر نظر ثانی کے مطالبے پر اپنے ردعمل میں کہاکہ نگران وزیراعلی کا انتخاب سیاستدانوں کا کام تھا، ہمارے پاس ایک آئینی تقاضہ تھے، انہوں نے چار نام ہمیں دیئے۔ جن پر انتہائی آئینی و قانونی طریقے سے مشاورت کی گئی اور ہر ایک چیز کو پرکھا گیا، الیکشن کمیشن کے چاروں ممبران اور چیف الیکشن کمشنر نے حسن عسکری کے نا م پر متفقہ طور پر اتفاق کیا۔ترجمان الیکشن کمیشن نے کہا الیکشن کمیشن کسی دبا میں آکر نہیں بلکہ میرٹ پر کام کرتاہے، ہم نے آئین و قانون کے تحت جانا ہے اس کے علاوہ اور کوئی راستہ نہیں، حسن عسکری کے نام کا فیصلہ بھی آئین و قانون کے دائرے میں ہوا۔