Buy website traffic cheap

زاہد حامد

سابق وفاقی وزیر برائے قانون زاہد حامد بھی عوامی غیظ وغضب کا نشانہ بن گئے، ووٹرزنے گاڑی پر ڈنڈے برسادیے

لاہور(ویب ڈیسک): سابق وزیر زاہد حامد بھی شہریوں کے غصے کا شکار ہوگئے اور پسرور کچہری کے دورے پر ناراض شہریوں نے ان کی گاڑی پر ڈنڈے برسادیئے۔عام انتخابات کے موقع پر مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے امیدواروں کو عوامی غیض و غضب کا سامنا ہے اور اب تک کئی امیدواروں کو ووٹرز نے گھیر کر ان کی کارکردگی پر باز پرس کی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق وفاقی وزیر قانون زاہد حامد سیالکوٹ کی پسرور کچہری میں اپنے بیٹے کے ہمراہ انتخابی نشان الاٹ کرانے کیلیے پہنچے تو واپسی پر وہاں موجود شہریوں نے انہیں گھیر لیا۔شہریوں نے زاہد حامد کیخلاف نعرے بازی کی اور چور چور کے نعرے بھی لگائے، نعرے بازی پرسابق وزیر اپنی گاڑی میں بیٹھ گئے جس پر لوگوں نے گاڑی پر ڈنڈے اور مکے بھی مارے۔زاہد حامد میڈیا اور شہریوں سے کوئی بھی بات کیے بغیر وہاں سے فوری روانہ ہوگئے۔واضح رہے کہ گزشتہ دور حکومت میں کاغذات نامزدگی میں حلف نامے کا تنازع سامنے آنے کے بعد زاہد حامد نے وزارت قانون سے استعفی دیا جب کہ وہ عام انتخابات میں حصہ نہیں لے رہے ان کی جگہ ان کے صاحبزادے مسلم لیگ (ن)کے ٹکٹ پر الیکشن لڑرہے ہیں۔