Buy website traffic cheap

سیاسی

شفاف انتخابات کے لئے آئی جی پنجاب کے اہم اقدامات

شفاف انتخابات کے لئے آئی جی پنجاب کے اہم اقدامات
سید بدر سعید
اس میں دو رائے نہیں کہ اس بار الیکشن ماضی کے انتخابات سے زیادہ مشکل ہو گا اس کی وجہ یہ ہے کہ سیاسی جماعتوں کے ساتھ ساتھ ووٹرز کی جانب سے بھی آواز اٹھنا شروع ہو گئی ہے اور میڈیا بھی معمولی سے معمولی بات کو بھی ہائی لائٹ کر رہا ہے ۔ یہ اچھی صورت حال ہے اور کہا جا سکتا ہے کہ اس شعور کی بدولت پاکستان میں جمہوریت مزید مضبوط ہو گی اور وہی لوگ پارلیمنٹ تک پہنچیں گے جن کو عوام نے ووٹ دیا ہو گا ۔ دھاندلی اور جبر کی سیاست یقینا اپنی موت آپ مر جائے گی ۔ دوسری جانب یہ بھی سچ ہے کہ ان انتخابات کی بدولت انتظامیہ پر شدید دباؤ ہے ، سیاسی جماعتیں بنا سوچے سمجھے الزامات لگانے کی کوشش کرتی ہیں تاکہ انتظامیہ پر دباؤ ڈالا جا سکے ۔ یہی وجہ ہے کہ تمام صوبوں کے چیف سیکرٹری اور آئی جیز تبدیل کئے گئے ہیں ۔ پنجاب میں سید کلیم امام آئے جی تعینات ہو ئے ہیں جو کہ پی ایچ ڈی کی ڈگری کے حامل ہیں ۔ پولیس فورس میں انہیں انتہائی تعلیم یافتہ ، محنتی ، قابل اور غیر جانبدار آفیسر کے طور پر جانا جاتا ہے ۔ انہوں نے اپنی تعیناتی کے فورا بعد ہی صوبے بھر میں ڈی پی اوز اور آر پی اوز کو تبدیل کر دیا کیونکہ عام طور پر یہی کہا جاتا ہے کہ ڈی پی اوز اور آر پی اوز کی مدد سے انتخابات پر اثر انداز ہوا جاتا ہے ۔ یہاں یہ بات بھی قابل غور ہے کہ ان میں متعدد ڈی پی اوز اچھی شہرت کے حامل ہیں جن کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ سیاست دانوں کے دباؤ میں نہیں آتے لیکن آئی جی پنجاب نے ہر قسم کے اعتراض کو ختم کرتے ہوئے تمام فیلڈ پوسٹ افسران کے تبادلے کر دیے ۔ان کا کہنا ہے کہ اسی طرح ایس ایچ اوز تک کی سطح پر تبادلے کیے جائیں گے ۔ انہوں نے متعدد افسران کو دیگر صوبوں اور وفاق میں بھی بھجوا دیا ہے ۔ آئی جی پنجاب کی جانب سے فوری طور پر کیے گئے یہ اقدامات ظاہر کرتے ہیں کہ وہ پنجاب میں شفاف انتخابات کو یقینی بنانے کے لئے ہر ممکن قدم اٹھائیں گے اور کم از کم پنجاب کی سطح پر اس بار شفاف انتخابات کا خواب ضرور پورا ہو گا ۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ آئی جی پنجاب تو اپنے محاذ پر ڈٹے ہوئے ہیں لیکن مکمل کامیابی اس وقت تک ممکن نہیں جب تک شہری ہر حوالے سے پولیس سے تعاون نہ کریں ۔ شہریوں اور میڈیا کی جانب سے کسی بھی قسم کے غیر قانونی کام پر فوری طور پر پولیس کو اطلاع دینے سے ہی ہم محفوظ اور دھاندلی سے پاک پنجاب کے خواب کی تعبیر پاسکیں گے ۔اس میں بھی دو رائے نہیں کہ دھاندلی زدہ لوگ اس بار بھی دھاندلی کی پوری کوشش کریں گے لیکن اس بار ان کی کامیابی ناکامی میں بدلتی نظر آ رہی ہے کیونکہ آئی جی پنجاب نے جس طرح بڑے پیمانے پر افسران کے تبادلے کیے ہیں اس سے عوام کو واضح پیغام ملا ہے کہ پولیس نہ صرف غیر جانبدار ہے بلکہ دھاندلی کے خلاف کسی بھی حد تک جانے کو تیار ہے ۔ اب گیند عوام کی کورٹ میں ہے کہ انتخابات میں وہ پولیس کے ساتھ کتنا تعاون کرتے ہیں اور انتخابی عمل کو مشکوک بنانے والے عناصر کی کس حد تک نشاندہی کرتے ہیں ۔ ایک روشن پاکستان اور کامیاب پنجاب کے خواب کی عملی تعبیر آئی جی پنجاب کلیم امام نے ہمیں دکھا دی ہے اب ہم سب کو ان کا ساتھ دیتے ہوئے اس خواب میں خوبصورت رنگ بھرتے ہوئے اسے عملی تعبیر میں ڈھالنا ہے