Buy website traffic cheap

پارلیمنٹ

صحافیوں کے درد کا مداوا ہو گیا .. بڑی خوشخبری

صحافیوں کے درد کا مداوا ہو گیا .. بڑی خوشخبری،،،،چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے صحافیوں اور ملازمین کو تنخواہیں ادا نہ کرنے والے میڈیا مالکان کو طلب کرلیا۔ ۔ عدالت نے تنخواہیں نہ دینے والے میڈیا مالکان کو کل طلب کرتے ہوئے میڈیا اداروں سے نکالے گئے صحافیوں کی برطرفیاں بھی معطل کردیں۔ چیف جسٹس پاکستان نے عدالتی حکم کے باوجود تنخواہیں نہ دینے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا مالکان ذاتی حیثیت میں پیش ہو کر وضاحت کریں، کیپیٹل ٹی وی سب سے بڑا ڈیفالٹر ہے، مجهے معلوم ہے اس کے مالک احمد ریاض شیخ نے 5 کروڑ کہاں سے لئے، احمد ریاض ہر صورت میڈیا ورکر کو تنخواہیں ادا کرے۔

————————
یہ خبر بھی پڑھیئے

سعودی عرب،عسیر کے سرد خانوں میں موجود 410متوفین کی نعشیں ان کے ملکوں کو روانہ
متوفین کی نعشوں کی فہرست میں پاکستان 135کے ساتھ پہلے اور بنگلہ دیشی تارکین وطن دوسرے نمبر پر ہیں
جدہ(÷÷÷سعودی عرب کے شہر عسیر میں سرد خانوں میں موجود 410متوفین کی نعشیں ان کے ملکوں کو روانہ کردی گئیں۔عسیر میں پوسٹ مارٹم کے شعبے کے سربراہ ڈاکٹر عبد العزیز آل حب شان نے کہا ہے کہ گزشتہ سال یکم محرم سے 29ذو الحجہ تک شعبے نے ریجن کے مختلف اسپتالوں کے سرد خانوں میں رکھی گئیں 410متوفین کی نعشوں کو ان کے ملک روانہ کیاہے۔ ان میں سر فہرست پاکستانیوں کی نعشیں تھیں جن کی تعداد135رہی۔ دوسرے نمبر پر بنگلہ دیشی تارکین ہیں جن کی تعداد71تھی۔ اسی طرح 58ہندوستانی، 46 مصری، 34 ایتھوپی، 27 فلپائنی، 16 نیپالی، 10 افغانی، 4 انڈونیشی، 3ترکی،2سری لنکی، 2 ارٹیری، ایک امریکی اور ایک نائیجری تارکین کی نعشیں تھیں۔انہوں نے کہا کہ پوسٹ مارٹم کا شعبہ متوفی کو وطن روانہ کرنے کا اجازت نامہ اس وقت فراہم کرتا ہے جب یقین ہوجائے کہ طبعی موت تھی۔ طبعی موت نہ ہونے کی صورت میں متوفی کو سرد خانے میں رکھا جاتا ہے یہاں تک کہ قانونی تقاضے پورے کئے جائیں۔ ایسے تارکین کی نعشیں بھی سرد خانوں میں رکھی جاتی ہیں جنہیں لاوراث شمار کیا جاتا ہے یا وہ جن کے ورثا بیرون ملک ہیں۔ حادثات میں وفات پانے والے افراد کو بھی سرد خانے میں رکھا جاتا ہے۔)جرمن چانسلر انجیلا میرکل نے کہا ہے کہ جی سیون میں روس کی واپسی یوکرائنی تنازعے میں بہتری کے آثار سے مشروط ہے۔انجیلا میرکل نے کینیڈا کے مقام لا مالبائی میں جی سیون سمٹ کے اجلاس میں شریک ہونے سے قبل رپورٹرز پر واضح کیا کہ گروپ کے اراکین روس کی واپسی پر متفق ہیں لیکن یوکرائنی بحران میں واضح پیش رفت سے قبل یہ ممکن نہیں۔انہوں نے اٹلی، برطانیہ اور فرانس کے رہنماؤں سے کانفرنس میں ملاقات کے بعد یہ بیان دیا۔میرکل کا بیان امریکی صدر کے اس بیان کے جواب میں ہے جس میں انہوں نے جی سیون میں روس کی واپسی کا کہا تھا۔