Buy website traffic cheap

الرحمان

صدارتی انتخاب سے دستبردارکیوں نہیں ہوسکتا، مولانا فضل الرحمٰن نے وجہ بتاکر نئی بحث چھیڑدی

لاہور(ویب ڈیسک): متحدہ مجلس عمل کے سربراہ اور اپوزیشن کے صدارتی امیدوار مولانا فضل الرحمن نے کہاکہمیں صدارتی امید وار کے طور پر پیچھے نہیں ہٹ سکتا کیونکہ مجھ پر اپوزیشن جماعتوں نے اعتماد کیا ہے ، مسلم لیگ ن کی جانب سے اعتزاز احسن کے نام پر اعتراض کی وجہ ان کے ن لیگ مخالف بیانات ہیں، جشن آزادی نہ منانے سے متعلق میرے الفاظ احتجاج کے الفاظ تھے، ہم 70 برسوں میں علامہ اقبال اور قائداعظم کے عظیم الشان مقاصدحاصل نہ کر سکے،منصب صدارت اپنی حدود اور اپنے اختیارات رکھتا ہے،اے پی سی میں پیپلزپارٹی نے کہاوزیراعظم مسلم لیگ ن سے ہوناچاہیے لیکن انتخابات میں انہوں نے ووٹ دینے سے انکار کر دیا،اب پیپلز پارٹی وزارت عظمیٰ کے بعد صدارتی انتخاب میں بھی اختلاف پیدا کر رہی ہے۔2002 کے انتخاب میں عمران خان اور دیگر جماعتیں میرے ساتھ تھیں مگر عین وقت پر پیپلزپارٹی کے 22 ارکان فارورڈ بلاک بنا کر ق لیگ میں چلے گئے اور میر ظفر اللہ جمالی وزیراعظم بن گئے۔