Buy website traffic cheap

عمران خان

عمران خان اپنے آبائی حلقے این اے 95میانوالی سے الیکشن لڑسکیں گے یا نہیں، قسمت کا فیصلہ ہوگیا

لاہور(ویب ڈیسک): الیکشن ٹریبونل نے پاکستان تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان کے کاغذاتِ نامزدگی مستردکیے جانے کیخلاف اپیل پر محفوظ فیصلہ سنادیا ہے اور پی ٹی آئی چیئرمیں عمران خان کو اپنے آبائی حلقے میانوالی سے الیکشن لڑنے کی اجازت دیکر ریٹرننگ آفیسر کا فیصلہ کالعدم قراردید یا ہے۔ دوران سماعت عمران خان کے وکیل بابراعوان نے دلائل دیےتھے کہ ان کے مؤکل نے کچھ بھی نہیں چھپایا بلکہ وضاحت پیش کی ہے۔ اپنے دلائل کے حق میں انہوں نے قومی وطن پارٹی ، شیخ رشید اور شکیل اعوان کے فیصلوں کی کاپی بھی عدالت کو فراہم کی۔ درخواست گزارکے وکیل نے دلائل دیےتھے کہ عمران خان کے خلاف ملک کی پانچ عدالتوں میں اعتراضات کیے گئے ہیں۔ کاغذاتِ نامزدگی پر پی ٹی آئی چیئرمین کے دستخط بھی مختلف ہیں انہوں نے اپنے صرف دو بیٹے ظاہر کیے ہیں اور ریٹرننگ آفیسر کے ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کے حکم کے باوجود حاضرنہیں ہوئے۔ جس پر جسٹس فیصل زمان نے ریمارکس دیے کہ کیا آپ کے پاس آراو کا تحریری حکم نامہ موجود ہے جس پر وکیل نے کہا کہ اس کے پاس نہیں ہے لیکن این اے ایک سو اکتیس کی فائل میں موجود ہے ۔ عدالت نے دونوں وکیلوں کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کیا تھا.