Buy website traffic cheap

نوازشریف

مریم نواز کی جائیدادوں‌کی تفصیلات منظر عام پر .

مریم نواز کی جائیدادوں‌کی تفصیلات منظر عام پر ……….مریم نواز کے کاغذات نامزدگی میں ظاہر کئے گئے اثاثوں کی تفصیلات منظر عام پر آ گئیں۔ مریم نواز نے الیکشن کمیشن میں جو تفصیلات جمع کروائی ہیں ان کے مطابق اثاثوں میں 1506 کنال زرعی رقبے اور چوہدری شوگر ملز،حدیبیہ پیپر ملز، حدیبیہ انجینیئرنگ پرائیویٹ لمیٹڈ، حمزہ اسپننگ ملز اور محمد بخش ٹیکسٹائل ملز سمیت پانچ ملوں میں شئیر ہولڈر ہیں

————————————
یہ خبر بھی پڑھیئے

سینٹرل کنٹریکٹ کی فہرست رواں ہفتے تیار ہوگی
دورہ زمبابوے سے قبل انجرڈ کھلاڑیوں کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا
لاہور———- دوہ زمبابوے سے قبل سینٹرل کنٹریکٹ کی فہرست رواں ہفتے کے آخر میں مرتب کیے جانے کا امکان ہے چیف سلیکٹر انضمام الحق، ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور بورڈ حکام کے ساتھ مشاورت کرینگے ٹور کیلیے اسکواڈ کو حتمی شکل دینے سے قبل انجرڈ کھلاڑیوں کی موجودہ صورتحال کا جائزہ بھی لیا جائے گا۔تفصیلات کے مطابق پی سی بی کی جانب سے کرکٹرز کو دیے جانے والے سینٹرل کنٹریکٹ 30جون کو ختم ہوجائیں گے، یکم جولائی سے شروع ہونے والے نئے معاہدوں کیلیے حتمی فہرست تاحال مرتب نہیں کی گئی،ذرائع کا کہنا ہے کہ اس بار کھلاڑیوں کی تعداد کم لیکن معاوضے زیادہ رکھنے کی تجویز زیر غور ہے، رواں ہفتے کے آخر میں چیف سلیکٹر انضمام الحق، ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور بورڈ حکام کے ساتھ مشاورت کے بعد فیصلہ کرینگے۔دوسری جانب تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر بائیکاٹ کی دھمکی دینے والے زمبابوین کرکٹرز کے تنازع کی وجہ سے ابھی تک سہ ملکی سیریز کے بارے میں حتمی طور پر کچھ نہیں کہا جا سکتا البتہ پاکستانی کرکٹرز مختصر تربیتی کیمپ کیلیے لاہور میں اکٹھے ہورہے ہیں،اسکواڈ منتخب کرنے سے قبل چند کھلاڑیوں کی انجریز کا بھی جائزہ لیا جائے گا، بابر اعظم انگلینڈسے ٹیسٹ سیریز کے دوران بازو کے فریکچر کا شکار ہوئے تھے، رومان رئیس پی ایس ایل تھری کے ایک میچ میں گھٹنہ زمین سے ٹکرانے پر زخمی ہونے کے بعد اب تک میدان میں نہیں اترے، عماد وسیم بھی اسی ایونٹ کے دوران سر پر چوٹ لگنے کے بعد گھٹنے کی پرانی تکلیف کا شکار ہوئے، تینوں کو زمبابوے میں ٹی ٹوئنٹی سیریز کیلیے زیر غور لانے کا فیصلہ فٹنس دیکھ کرکیا جائے گا،محمد عامر کو آرام دینے یا کھلانے کا فیصلہ بھی اہم ہوگا۔یاسر شاہ ٹی ٹوئنٹی میچز میں تو شریک نہیں ہونگے لیکن رواں سال کے اختتام پر یواے ای میں نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کیخلاف سیریز میں انھیں حصہ لینا ہے، لیگ اسپنر کی فٹنس کا بھی جائزہ لیا جائے گا۔