Buy website traffic cheap


معروف انگلش بلے بازایلسٹر کک سے انٹرنیشنل کرکٹ کو خیرآباد کہہ دیا

لاہور(ویب ڈیسک): سٹار انگلش بلے باز اور سابق کپتان ایلسٹر کک نے کہا ہے کہ رواں ہفتے بھارت کے خلاف شیڈول پانچواں ٹیسٹ ان کے کیریئر کا آخری میچ ہوگا۔ 33 سالہ کک نے 2006ء میں ٹیسٹ کیریئر کا آغاز کیا تھا اور انہوں نے 12 سالہ کیریئر کے دوران غیرمعمولی بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ملک کی طرف سے کئی ریکارڈز اپنے نام کئے، وہ ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں زیادہ رنز بنانے والے بلے بازوں کی فہرست میں چھٹے نمبر پر موجود ہیں، انہیں انگلینڈ کی طرف سے زیادہ رنز بنانے، زیادہ سنچریاں بنانے، زیادہ 150 پلس سکور بنانے، زیادہ ٹیسٹ میچز کھیلنے، بطور کپتان زیادہ میچز کھیلنے اور زیادہ کیچز تھامنے کا اعزاز حاصل ہے، اس کے علاوہ انہیں مسلسل زیادہ ٹیسٹ میچز کھیلنے کا عالمی اعزاز بھی حاصل ہے۔انہوں نے بطور اوپنر زیادہ ٹیسٹ رنز بنا کر عالمی ریکارڈ پر قبضہ جما رکھا ہے۔ گذشتہ روز انہوں نے انٹرنیشنل کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا۔ انگلش بلے باز نے کہا کہ میں نے کیریئر کے دوران جو کچھ حاصل کیا اس کے بارے تصور بھی نہیں کیا تھا اور مجھے اپنی کامیابیوں پر فخر ہے، میں نے طویل سوچ وچار کے بعد یہ فیصلہ کیا، بلاشبہ یہ میرے لئے ایک مایوس کن دن ہے اور کئی ساتھی کھلاڑی بھی میرے اقدام سے ناخوش ہیں لیکن میں سمجھتا ہوں کہ یہ کرکٹ سے کنارہ کشی کا صحیح وقت ہے۔انہوں نے کہا کہ میں نے نوجوان کھلاڑیوں کیلئے جگہ خالی کی ہے تاکہ وہ بہتر پرفارم کر کے ٹیم کو فتوحات دلانے میں کردار ادا کر سکیں، میں آج جس مقام پر ہوں اس میں میری فیملی، مداحوں اور سپورٹنگ سٹاف کا بہت تعاون ہے میں سب کا شکریہ ادا کرتا ہوں، میری ہمدردیاں ہمیشہ ٹیم کے ساتھ رہیں گی اور میری خواہش ہے کہ ٹیم تینوں فارمیٹس میں اپنی بادشاہت قائم کرے، ان کا کہنا ہے کہ جب تک فٹ ہوں ڈومیسٹک کرکٹ کھیلنا جاری رکھوں گا۔ کک نے 160 ٹیسٹ میچز میں 32 سنچریوں کی مدد سے 12254رنز بنا رکھے ہیں، 294 اننگز میں بہترین سکور تھا، انہیں 92 ون ڈے اور چار ٹی ٹونٹی میچز میں بھی ملک کی نمائندگی کا اعزاز حاصل ہے۔