Buy website traffic cheap

تجاوزات

منشابم قانون کی گرفت میں آگیا تو بڑے بڑے شکنجے میں آئیں گے

لاہور(خصوصی تجزیہ) ابھی تک منشابم کی صورت میں چابی سے کرپشن کا دروازہ کھلے گا تو کمرے سے بڑے بڑے پردہ نشین بے پردہ ہونگے جن میں بیورو کرےسی کے امام سےاستدان اور دےگر اداروں کے افسران شامل ہونگے۔ ابھی تو صرف ایم اےن اے کرامت کھوکھر اور ایم پی اے ندیم عباس بارا سامنے آئے ہیں جنہوں نے عدالت سے غیر مشروط معافی طلب کی ہے مگر جب منشابم نےب یا اےف آئی اے کے شکنجے میں آیا اور ٹیں ٹیں بولنے لگا تو وہ احد چیمہ اور فواد حسن فواد کو بھی پےچھے چھوڑ جائےگا۔ سوشل میڈیا پر بعض معروف سےاستدانوں کی منشابم کے ہاتھوں میں ہاتھوں ڈالے والی تصاویر بھی وائرل ہوچکی ہیں۔ اس سلسلے میں گزشتہ روز جب سابق حکومت پنجاب کے ایک صوبائی وزیر رانا ثنا اللہ سے پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ منشابم کو اےسے ہی خوفناک مافیا بناکر پےش کردیا گیا وہ تو چھوٹا موٹا فراڈیا ہوگا جس نے چند پلاٹوں پر قبضہ کیا ہوگا۔ رانا ثنا اللہ نے یہ بیان اس لئے دیا کہ منشابم اسی دور کی حکومت میں پروان چڑھا تھا اور اسی کی مہربانی سے وہ اتنا مضبوط مافیا بنا۔ ابھی تو صرف جوہر ٹاﺅن میں اس کے 25 فرنےچر کے شورومز گرائے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ اس نے کہاں کہاں قبضے کئے کس کس کی آشیرباد حاصل کرکے اسے نوازا یہ تو اس کی گرفتاری پر ہی بم پھٹے گا۔ موجودہ گورنر پنجاب چودھری سرور جب (ن) لےگ دور میں گورنر تھے تو انہوں نے ان ریمارکس کے ساتھ استعفیٰ دیا تھا کہ اس ملک میں حکومت سے زیادہ قبضہ مافیا مضبوط ہے اور اب وہ مضبوط قبضہ مافیا سامنے آگیا ہے اور دیکھنا یہ ہے کہ اس پر کتنا مضبوط ہاتھ ڈالا جاتا ہے اور کن کن پردہ نشےنوں کو وہ بے نقاب کرتا ہے۔