Buy website traffic cheap

وزیراعظم ہاؤس

پاکستان تحریک انصاف نے اپنے منشورپر عمل کرتے ہوئےایوانِ وزیراعظم اور چاروں گورنرہاؤسز کے متعلق اہم فیصلہ کرلیا

لاہور(ویب ڈیسک): وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ چنبہ ہاؤس لاہورکوگورنر آفس بنادیاجائےگاجبکہ 90 شاہراہ میں موجود ہال کوکنونشن سینٹرمیں تبدیل کیاجائےگااورسٹیٹ گیسٹ ہاؤس لاہورکوفائیو سٹار ہوٹل بنانے کی تجویزہے۔ پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گورنرہاؤس لاہورکومیوزیم اورآرٹ گیلری بنایاجائےگااورگورنرہاؤس پارک عوام کیلئے کھول دیاجائے گا،شفقت محمود کا کہناتھا کہ گورنرہاؤس لاہورکی مال روڈدیوارگراکرخوبصورت جنگلالگایاجائےگا۔

شفقت محمود نے کہا کہ سٹیٹ گیسٹ ہاؤس کراچی کوگورنرہاوٗس بنایاجائےگاجبکہ گورنرہاؤس بلوچستان کومیوزیم بنانے کافیصلہ کیا گیا ہے،اس کے علاوہ گورنرہاؤس بلوچستان میں خواتین کیلئے پارک بنانے کی تجویزبھی زیرغور ہے۔ان کا کہناتھا کہ پشاورمیوزیم میں 30 ہزارتاریخی نوادرات ہیں لیکن جگہ نہیں،گورنرہاؤس پشاورکوتاریخی میوزیم بنائیں گے۔ وفاقی وزیر تعلیم نے کہا کہ گورنرہاؤس مری کوہوٹل اورپنجاب ہاؤس کوسیاحتی کمپلیکس بنانے کافیصلہ کیا ہے،گورنرہاؤس مری پرحال ہی میں پنجاب حکومت نے 60 کروڑخرچ کئے ہیں،ان کا کہناتھا کہ راولپنڈی میں پنجاب ہاؤس کوبھی تعلیمی ادارہ بنانےکافیصلہ کیا گیا ہے۔حکومت نے وزیراعظم ہاﺅس کو اعلیٰ درجے کا تعلیمی ادارہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ وفاقی وزیرتعلیم شفقت محمود نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاہے کہ حکومت نے وزیراعظم ہاؤس کواعلیٰ درجے کاتعلیمی ادارہ بنانے کافیصلہ کیا ہے،وزیراعظم ہاؤس میں اعلیٰ درجے کی یونیورسٹی بنائی جائےگی،انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اورگورنرزسرکاری عمارتوں میں نہیں رہیں گے۔ شفقت محمود نے کہا کہ وزیراعظم ہاؤس ایک ہزار 96 کنال پرمشتمل ہے اوراس کا خرچہ 47 کروڑروپے سے زائدہے۔ واضح رہے کہ عمران خان نے اقتدار سنبھالنے پر اعلان کیا تھا کہ وہ وزیراعظم ہاﺅس اور چاروں گورنرہاﺅس کو تعلیمی اداروں میں تبدیل کریں گے اور انہیں عوام کیلئے استعمال کیلئے لائیں گے۔