Buy website traffic cheap

چین پاکستان معاشی راہداری

چین پاکستان معاشی راہداری کے متعلق گردش کرتی افواہیں پر ن لیگ اور پی ٹی آئی آمنے سامنے آگئیں، الزامات کی بوچھاڑ

لاہور(ویب ڈیسک): مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہاہے کہ حکومت نے سی پیک کے فنڈز روک لئے ہیں جس سے سی پیک کے مغربی حصے کی تکمیل میں تاخیر ہو جائیگی ،چین نے ہمارا اس وقت ساتھ دیا جب کوئی ہمیں دس ڈالر دینے کے لئے تیار نہیں تھا ۔ احسن اقبال نے کہا کہ حکومت نے سی پیک کے حوالے سے متنازعہ بیان کی تردید کی ہے لیکن اس منصوبے کو قوم کی نظروں میں متنازعہ کرنا پاکستان کے مستقبل سے کھیلنے والی بات ہے ۔ ہم نے ایک کاغذ کے ٹکڑے کو اربوں ڈالر کے منصوبے میں تبدیل کردیا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ جو صدی کا منصوبہ ہے اس کو متنازعہ کرنا نہ پاکستان کے مفاد میں ہے اور نہ چائنہ کے مفاد میں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے جو وضاحت کی ہے اس میں یہ نہیں کہا کہ ہم اس کی تردید کرتے ہیں بلکہ یہ کہا کہ بیان کو سیاق وسباق سے ہٹ کر پیش کیا گیاہے ۔جبکہ دوسری جانب پاکستنا ن تحریکِ انصاف کے سینٹر شبلی فرازتحریک انصاف کے رہنما شبلی فراز نے کہاہے کہ مسلم لیگ ن کی حکو مت نےسی پیک کے معاملات کوانتہائی خفیہ بنانے رکھا ، کمیٹی محض دکھاوے کیلئے بنائی گئی تھی ۔ شبلی فراز نے کہا کہ سی پیک پر کوئی تنازع نہیں اور یہ منصوبہ پاکستان کے مفاد میں ہے ۔ مسلم لیگ ن کی حکومت نے اس کو اتنا خفیہ بنایا کہ ہم کو کوئی معلومات نہیں ملتی تھیں ۔میں سی پیک کے حوالے سے بننی والی کمیٹی کا ممبر تھا اور میں کوئی سنی سنائی بات نہیں کررہا ہوں۔ میں سب سے زیادہ اس ایشو پر بولتا تھا جس سے سب کوپتہ چل گیا تھا کہ محض دکھائے کیلئے ایک کمیٹی بنائی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک کے معاملے پر سابق حکومت نے اس طرح رویہ اپنایا ہوا تھا کہ جس سے ایسا لگتا تھا کہ یہ منصوبہ پاکستان کا نہیں بلکہ مسلم لیگ ن کاہے ۔ ہم اس منصوبے کی تمام تفصیلات میڈیا پر قوم کے سامنے لائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم یہ ضرورت کہتے ہیں کہ چائنہ ہمارا دوست ہے ، سی پیک کو اتنا متنازعہ نہ بنایا جائے ، ہم سی پیک کو تیز ی سے آئے بڑھائیں گے ۔