Buy website traffic cheap

ڈیموں

کوئی شرمندہ نہ ہو .. جسٹس ثاقب نثار کا اہم اعلان

کوئی شرمندہ نہ ہو .. جیف جسٹس کا اعلان…..سپریم کورٹ میں کسانوں کو گنے کے معاوضے کی عدم ادائیگی کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے دو ملوں کی جانب سے ادائیگی کے لیے مزید وقت کی استدعا مسترد کرتے ہوئے دو روز میں بقایا جات ادا کرنے کا حکم دیا۔ ۔ دوران سماعت چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیے کہ ریٹائرمنٹ کے بعد کوئی عہدہ قبول نہیں کروں گا، ریٹائرمنٹ سے ایک دن پہلے کہہ کر جاؤں گا، مجھے ریٹارمنٹ کے بعد کوئی عہدہ آفر کر کے شرمندہ نہ ہوں

————————–
یہ خبر بھی پڑھیئے

مسابقتی کمیشن نے شوگر ایکٹ پر نظرثانی کی تجویز دے دی
ریٹ مقررکرتے وقت دیگرفصلوں کے دام بھی مدنظررکھے جائیں،وفاق وصوبوں کو سفارشات
اسلام آباد —- مسابقتی کمیشن آف پاکستان نے کہا ہے کہ ملک میں گنے کی پیداوار بڑھانے، معیار کو بہتر کرنے اور چینی کی برآمد بڑھانے کے لیے وفاقی و صوبائی حکومتوں کو شوگر ایکٹ سمیت قانونی لائحہ عمل پر نظر ثانی کرنی چاہیے۔مسابقتی کمیشن آف پاکستان (سی سی پی) نے شوگر سیکٹر میں مسابقتی تحفظات کے حوالے سے اپنی سفارشات جاری کردی ہیں۔ سی سی پی کی جانب سے کہا گیا ہے کہ صوبائی حکومتوں کو گنے کی فلور پرائس مقرر نہیں کرنی چاہیے اور مارکیٹ کو فلور پرائس کا تعین کرنے دینا چاہیے۔پرائس فلور محدود وقت کے لیے نافذ کرنی چاہیے۔ مسابقتی کمیشن آف پاکستان کے مطابق وفاقی و صوبائی سطح پر حکومتوں کو گنے کی پیداوار کے بارے میں آزادانہ طریقے سے پیش گوئی کرنی چاہیے۔دستاویز کے مطابق سی سی پی نے کہا ہے کہ گنے کی قیمت مقررکرتے وقت دیگر فصلوں کی قیمت کو بھی مدنظر رکھنا چاہیے تاکہ دیگر فصلیں اگانے والے کسانوں کو مایوسی نہ ہو۔ دستاویز کے مطابق صوبائی حکومتیں گنے کی فلور پرائس مقرر کرتی ہیں تو ان کو اس پر عمل درآمد کرانا چاہیے۔مسابقتی کمیشن آف پاکستان نے سفارش کی ہے کہ وسیع پیمانے پر گنے کی فصل اگانے والے کسانوں کو پریمیم دینا چاہیے۔ اس سے گنے کی فصل کی پیداوری لاگت کم کرنے میں مدد ملے گی۔ گنے کی فصل کی بہتر پیداوار کے لیے تحقیقی سرگرمیاں کم ہوگئی ہیں جس سے زیادہ پیداوار دینے والی اقسام ملک میں کاشت نہیں ہو رہیں۔گنے کے زیادہ پیداوار دینے والی اقسام کی کاشت کے لیے نئے بیج متعارف کروانے چاہئیں اور ملوں میں بھی آر اینڈ ڈی سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے۔ سی سی پی نے تجویز دی ہے