Buy website traffic cheap

ہائیکورٹ نے غیر

ہائیکورٹ نے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا حکم دے دیا

ہائیکورٹ نے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا حکم دے دیا
لاہور: ہائیکورٹ نے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا حکم دے دیا۔ اور اس کے ساتھ تقسیم کار کمپنیوں کو بجلی کی بندش کی تفصیلات ویب سائٹ پر اپ لوڈ کرنے کا حکم دیا۔جسٹس شاہد کریم نے ایڈووکیٹ اظہر صدیق کی درخواست پر بجلی کی طویل اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کےخلاف درخواست کی سماعت کی۔ بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں لیسکو، فیسکو اور گیپکو نے عدالت میں اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا شیڈول پیش کردیا۔درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ بجلی کی اعلانیہ و غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے جس کی وجہ سے صارفین کو سخت پریشانی کاسامنا ہے۔ ۔درخواست گزار نے استدعا کی کہ عدالت غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا حکم دے۔لاہور ہائیکورٹ نے غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ فوری ختم کرنے کا حکم دے دیا.

ضرور پڑھیے:

ڈیرہ غازی خان، خواتین کے حقوق کیلئے آواز اٹھانے والی سوشل ورکر آسیہ اکبر قتل

ڈیرہ غازی خان: صوبہ پنجاب کے شہر ڈیرہ غازی خان میں خواتین کے حقوق کی آواز اٹھانے والی سوشل ورکر آسیہ اکبر کو ان کی چھوٹی بہن کے سسر نے فائرنگ کرکے قتل کردیا۔پولیس کے مطابق آسیہ اکبر کے قتل کا واقعہ ڈیرہ غازی خان کے علاقے بستی فوجہ میں پیش آیا۔ابتدائی تفتیش میں معلوم ہوا ہے کہ کچھ عرصہ قبل مقتولہ آسیہ کی چھوٹی بہن اقصی شادی کے بعد خان پور چلی گئی تھی، شادی کو صرف 15 دن ہی گزرے تھے کہ مقتولہ آسیہ اکبر اپنی بہن کو سسرال سے واپس ڈیرہ غازی خان لے آئی۔پولیس کے مطابق اقصی کے سسر کو شک تھا کہ آسیہ اس کی بہو کو گھر والوں کے خلاف گمراہ کر رہی ہے، جس پر اس نے آسیہ اکبر کو فائرنگ کرکے قتل کیا اور فرار ہوگیا۔پولیس کے مطابق آسیہ کے قتل کے بعد سے اقصی لاپتہ ہے۔دوسری جانب معاملے پر قانونی کارروائی جاری ہے اور ملزم کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں۔