Buy website traffic cheap

شیخ رشید

ہار کا خوف یا کوئی اور وجہ ، شیخ رشید کا حیران کُن بیان

ہار کا خوف یا کوئی اور وجہ ، شیخ رشید کا حیران کُن بیان….شیخ رشید احمد نے کہاہے کہ الیکشن کمیشن حلف نامہ جمع کرانے کیلیے ایک دو روزکی مہلت دے اورشدید گرمی کے باعث پولنگ کاوقت رات 12بجے تک کیاجائے، ملک میں مہنگائی ہیبت ناک ہے لوڈشیڈنگ نے سابق حکومت کی کارکردگی کا پول کھول دیا۔ انھوں نے کہاکہ حلف نامہ اتنا مشکل ہے کہ بعض لوگوں کی چیخیں نکل جائیں۔

————————-
یہ خبر بھی پڑھیئے

آئی ایم ایف ارجنٹائن کو 50 ارب ڈالر کا قرضہ دینے پر آمادہ
لندن(یو این پی)عالمی مالیاتی فنڈ اور ارجنٹائن کے درمیان 50 ارب ڈالر کے قرضے کیلئے 3سالہ اسٹینڈ بائی معاہدہ طے ہو گیا ہے۔ ادارے کے مطابق گزشتہ مہینے ارجنٹائن نے قرضے کیلئے ہم سے رجوع کیا تھا جس پر غور کرنے کے بعد ہم نے 3 سالہ اسٹینڈ بائی قرضہ دینے پر اتفاق کرلیا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ارجنٹائن کی ملکی کرنسی کی قدر میں حالیہ عرصے کے دوران نمایاں کمی واقع ہوئی ہے اور امید ہے کہ 50 ارب ڈالر کی یہ رقم اس کے بیرونی قرضوں کی ادائیگی میں مدد دے گی۔
لاہور چیمبر کے صدر ملک طاہر جاوید نے کہا ہے کہ کاروباری تنازعات نمٹانے کیلئے ثالثی اور مصالحت بہترین راستے ہیں کیونکہ ان سے وقت اور سرمایہ دونوں کی بچت اور معاملات خوش اسلوبی سے طے ہوتے ہیں، ان خیالات کا اظہارانہوں نے لاہور چیمبر میں ‘‘تنازعات نمٹانے کے متبادل طریقے ’’ کے موضوع پر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا جس کا اہتمام لاہور چیمبر، ویب کوپ اور امریکن سولیڈیریٹی سینٹر نے مشترکہ طور پر لاہور چیمبر میں کیا تھا، ویب کوپ کے وائس چیئرمین چو ہدری نسیم اقبال، سید نذر حسین، محمد یعقوب، سہیل لاشاری اور دیگر ماہرین نے بھی اس موقع پر خطاب کیا، ملک طاہر جاوید نے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک میں تنازعات نمٹانے کیلئے ثالثی اور مصالحت کو ترجیح دی جاتی ہے ، تنازعات نمٹانے کے روایتی طریقوں پر وقت اور سرمایہ دونوں صرف ہوتے ہیں ، اس کے باوجود اکثر اوقات مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہوتے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی تاجروں کو درپیش بہت سے چیلنجز میں سے کاروباری تنازعات سر فہرست ہیں ، یہ بات خوش آئند ہے کہ پاکستان میں کاروباری تنازعات افہام و تفہیم سے نمٹانے کیلئے شعور و آگہی پیدا کی جارہی ہے ،گزشتہ سال لاہور چیمبر نے لاہور ہائی کورٹ کے ساتھ ایک مفاہمتی یادداشت پر دستخط کیے تھے جس کا مقصد کاروباری تنازعات نمٹانے کے عمل میں لاہور چیمبر کی شمولیت تھا۔ کاروباری ماحول بہتر بنانے کیلئے عدالتوں سے باہر مصالحت کے تصور کو فروغ دینے کیلئے تمام آپشنر استعمال کرنا ہونگے کیونکہ کاروباری تعلقات بڑھنے کے ساتھ تنازعات کے امکانات بھی بڑھتے جاتے ہیں۔ لاہور چیمبر کی جانب سے عدالت سے باہر مصالحت کی سہولت متعارف کرانے کا مقصد مقامی و غیرملکی کمپنیوں کو غیرضروری قانونی چارہ جوئی ، پیسے اور وقت کے ضیاع سے بچانا ہے۔