Buy website traffic cheap

غزہ میں حماس کا تختہ

غزہ میں حماس کا تختہ الٹا جا سکتا ہے، اسرائیلی وزیرکا دعویٰ

غزہ میں حماس کا تختہ الٹا جا سکتا ہے، اسرائیلی وزیرکا دعویٰ
تل ابیب: ایک سینئر اسرائیلی وزیر نے کہا ہے کہ اسرائیل غزہ پٹی سے حماس کا انتظام ختم کرنے کے آپشن کے انتہائی قریب پہنچ چکا ہے۔ اگر کوئی اور راستہ باقی نہ رہا، تو اسرائیل غزہ میں حماس کی حکومت ختم کر دے گا۔غیرملکی خبررساں ادرے کے مطابق ایک بیان میں اسرائیلی وزیر یووال اسٹائنِٹس نے کہاکہ اسرائیلی حکومت غزہ پٹی میں حماس کا کنٹرول ختم کرنے کے آپشن کے انتہائی قریب پہنچ چکی ہے۔اسٹائنِٹس نے کہا کہ اسرائیل غزہ میں ایک مکمل جنگ شروع کرنے کے حق میں نہیں ہے تاہم ماضی میں اسرائیلی حکومت غزہ میں حماس کا تختہ الٹنے کے آپشن کے اتنے قریب کبھی نھی نہیں آئی تھی۔انہوں نے کہا کہ اگر کوئی اور راستہ نہ ملا تو یہ کیا بھی جا سکتا ہے۔ حماس کا کہنا ہے کہ اسرائیل کے ساتھ ایک سیز فائر معاہدہ طے پا چکا ہے، تاہم اسرائیلی حکومت اب تک ایسے کسی بھی معاہدے سے انکاری ہے۔ اسٹائنِٹس نے واضح کیا ہے کہ حماس کے ساتھ جنگ بندی کی ڈیل نہیں ہوئی ہے۔

ضرور پڑھیے:
مصری عدالت نے اخوان المسلمون کے سربراہ محمد بدیع کو عمر قید کی سزا سنا دی

قاہرہ: ایک مصری عدالت نے کالعدم جماعت اخوان المسلمون کے سربراہ محمد بدیع کو عمر قید کی سزا سنا دی ،ا س مقدمے میں اخوان المسلمون سے تعلق رکھنے والے متعدد دیگر رہنماوں کو بھی سزائیں سنائی گئیں،اس مقدمے میں ایک اور ملزم کو پندرہ برس اور تین کو دس برس قید کی سزائیں سنائی گئیں۔ غیرملکی خبررساںں ادارے کے مطابق عدالتی حکام نے بتایاکہ انہیں پانچ برس قبل ملک میں ہونے والے مظاہروں کو ہوا دینے اور لوگوں کو قتل پر راغب کرنے جیسے الزامات کے تحت یہ سزا سنائی گئی۔ اس مقدمے میں اخوان المسلمون سے تعلق رکھنے والے متعدد دیگر رہنماو¿ں کو بھی سزائیں سنائی گئی ہیں۔ مصری خبر رساں ادارے کے مطابق اس مقدمے میں ایک اور ملزم کو پندرہ برس اور تین کو دس برس قید کی سزائیں سنائی گئیں۔