Buy website traffic cheap

IMF deal: Big drop in dollar value in open market

ملک میں جاری غیر یقینی صورتحال کے بعد ڈالر کو بھی پر لگ گئے

کراچی:پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی گرفتاری اور ملک میں پیدا ہونے والی غیر یقینی صورتحال کے بعد ڈالر کو بھی پر لگ گئے۔ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔ڈالر کی قیمت میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے۔ انٹربینک میں ڈالر کی قیمت میں 3 روپے 65 پیسے اضافہ ہو گیا۔انٹربینک میں ڈالر 288روپے 50 پیسے پر ٹریڈ کر رہا ہے۔اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں 3 روپے اضافہ ہوا جس کے بعد اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت 293 روپے ہو گئی۔فاریکس ڈیلرز کے مطابق بینکس درآمد کنندگان کو ڈالر 290 روپے میں فروخت کر رہے ہیں۔گذشتہ روز انٹر بینک اور مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں روپے کے مقابلے ڈالر مہنگا ہو گیا۔بینک دولت پاکستان کے مطابق 99پیسے کے اضافے سے انٹر بینک میں ڈالرکی قدر284.84روپے پر جا پہنچی جبکہ فاریکس ایسوسی ایشن ا?ف پاکستان کے مطابق منگل کو1.20روپے کے نمایاں اضافے سے انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر284.05روپے سے بڑھ کر285.25روپے ہو گئی اسی طرح اوپن مارکیٹ میں ڈالر 2روپے مہنگا ہو گیا جس سے ڈالر کی قیمت فروخت 288روپے سے بڑھ کر290روپے ہو گئی۔رپورٹ کے مطابق یورو کی قدر میں50پیسے کی کمی واقع ہوئی جس سے یورو کی قیمت فروخت316روپے سے گھٹ کر315.50روپے ہو گئی تاہم1روپے کے اضافے سے برطانوی پونڈ کی قیمت فروخت 362روپے سے بڑھ کر363روپے پر جا پہنچی۔دوسری جانب پارلیمانی سیکرٹری کرن ڈار نے قومی اسمبلی کو بتایا ہے کہ ڈالر کی قیمتوں میں اتار چڑھاﺅ پی ا?ئی اے کرایوں میں اضافے کی وجہ ہے۔انہوں نے کہاکہ ڈومیسٹک کرایوں میں پی ا?ئی اے ان روٹس پر بھی پروازیں چلاتا ہے جہاں دوسری نہیں جاتی۔ انہوںنے کہاکہ اس وجہ سے پی ا?ئی اے کے کرایوں میں اضافہ ہوتا ہے۔