Buy website traffic cheap

Clash between the workers of Karachi Mayor Election, Peoples Party and Jamaat-e-Islami

میئرکراچی الیکشن ،پیپلزپارٹی اورجماعت اسلامی کے کارکنان میں تصادم

کراچی میں میئر کے الیکشن کے موقع پر آرٹس کونسل کے باہر پیپلزپارٹی اور جماعت اسلامی کے کارکنان آمنے سامنےآگئے۔پیپلزپارٹی اور جماعت اسلامی کے کارکنان نے ایک دوسرے پر شدید پتھراو کیا، حالات کو کنٹرول کرنے کے لیے پولیس اور رینجرز کی کوششیں جاری ہیں، پولیس کی جانب سے لاٹھی چارج بھی کیا گیا ہے۔آرٹس کونسل کے باہرکھڑی متعددگاڑیوں کے شیشے ٹوٹ گئے اور دونوں جانب سے متعدد افراد زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔پولیس اور رینجرز نے دونوں پارٹیوں کے کارکنوں کو الگ کیا جس کے بعد آرٹس کونسل کے باہر صورتحال معمول پر آگئی اور مشتعل کارکنان منتشر ہوگئے۔خیال رہے کہ پیپلز پارٹی کے مرتضیٰ وہاب 173 ووٹ لے کر میئر کراچی منتخب ہوگئے ہیں۔میئر کراچی کے لیے پیپلزپارٹی کے امیدوار مرتضیٰ وہاب اور جماعت اسلامی کے حافظ نعیم کے درمیان ہوا جس میں مرتضیٰ وہاب کو 173 ووٹ ملے جب کہ حافظ نعیم کو 160 ووٹ ملے، اس طرح مرتضیٰ وہاب 13 اضافی ووٹ لے کر میئر کراچی منتخب ہوگئے تاہم نتائج کا حتمی اعلان الیکشن کمیشن کرے گا۔کراچی کے آرٹس کونسل اڈیٹوریم کوپولنگ اسٹیشن قرار دیا جہاں تقریباً 32 کے قریب ارکان نہیں پہنچے۔پی ٹی آئی کے فردوس شمیم سمیت تین ارکان کو بکتر بند میں لایا گیا، اس دوران پولنگ اسٹیشن کے باہر پیپلزپارٹی اور جماعت اسلامی کے کارکنان جمع تھے، پولنگ اسٹیشن کے باہر دونوں جماعتوں کے کارکنان نے شدید نعرے بازی کی۔