Buy website traffic cheap

Floods in Sutlej due to India's release of water, displacement of thousands of people

بھارت کے پانی چھوڑنے سے ستلج میں سیلاب، نقل مکانی شروع

بہاول نگر دریائے ستلج میں بھارت کی جانب سے چھوڑے گئے پانی کی وجہ سے اونچے درجے کا سیلاب اگیا جس کے بعد ہائی الرٹ جاری کر دیا گیا۔قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے (پی ڈی ایم اے) پنجاب کے ترجمان نے کہا کہ دریائے ستلج میں اونچے سے بھی انتہائی اونچے درجے کی سیلابی صورتحال ہے۔گنڈا سنگھ کے مقام پر پانی کی سطح 23 فٹ تک بلند اور بہاو¿ 2لاکھ 78 ہزار کیوسک ہے۔ ہیڈ سلیمانکی سے 80 ہزار کیوسک پانی کا ریلہ گزر رہا ہے۔پاک فوج کو امدادی کاموں کے لیے بلا لیا گیا ہے۔ دریائی بیلٹ کے21 مواضعات کی 53 ہزار سے زائد آبادی کو فوری نقل مکانی کرنے کی ہدایت کیی گئی ہے۔لالیکا ، چاویکا ، وزیرکا، کوٹ مخدوم ، بونگہ احسان ، ککو بودلہ ، پیرسکندر ، کالیہ شاہ ، جودھیکا سمیت دیگر علاقوں سے نقل مکانی جاری ہے۔ اب تک 4805 افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کردیا گیا ہے۔ترجمان پی ڈی ایم اے کے مطابق بھارت کی جانب سے 21 اگست تک روزانہ کی بنیاد پر پانی چھوڑے جانے کی اطلاعات ہیں۔سیلاب کے باعث متعدد حفاظتی بند ٹوٹنے اور بستیاں زیر آب آنے کا خطرہ ہے۔منگلا ڈیم میں پانی کی سطح انتہائی بلند ہوگئی ہے۔ دریائے ستلج میں بیلی کلاں کا ایک رہائشی ڈوب گیا ہے۔ محمد نگر بستی ہیبت کے(بیلی کلاں) کا رہائشی فیض احمد ہٹھاڑ کے علاقہ سے مال مویشی نکالتے ہوئے سیلابی ریلے میں ڈوب گیا جس کی لاش نکال لی گئی ہے۔