Buy website traffic cheap


بھارت آئی پی ایل کیلئے پھر خود غرض بن گیا

نئی دہلی: بھارت آئی پی ایل کیلیے پھر خود غرض بن گیا، کیریبیئن لیگ کا شیڈول تبدیل کرنے کیلیے ویسٹ انڈیز پر دباﺅ ڈالنے لگا،سی پی ایل کو اپنے وقت سے ہفتہ، 10 دن پہلے ختم کرنے کا مطالبہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی کرکٹ بورڈ نے اپنی آئی پی ایل کیلیے خود غرضی کی انتہا کرتے ہوئے اب ویسٹ انڈین کرکٹ بورڈ پر بھی حکم چلانا شروع کردیا ہے، بی سی سی آئی نے ایک روز قبل اپنیعام اجلاس میں آئی پی ایل کے 14 ویں ایڈیشن کو ستمبر اکتوبر میں متحدہ عرب امارات میں مکمل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بھارت باقی 31 میچز 19 ستمبر سے 10 اکتوبر تک مکمل کرنا چاہتا ہے تاہم فی الحال اس کیلیے بڑی پریشانی کیریبیئن پریمیئر لیگ ثابت ہورہی ہے جوکہ 28 اگست سے 19 ستمبر تک کھیلی جائے گی، جس کی وجہ سے کئی اہم پلیئرز آئی پی ایل کے ابتدائی میچز کیلیے دستیاب نہیں ہوں گے۔

اس لیے بی سی سی آئی چاہتا ہے کہ کرکٹ ویسٹ انڈیز اپنی سی پی ایل کو ہفتہ 10 دن پہلے ختم کردے، اس بارے میں بھارتی بورڈ کے ایک آفیشل نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ہم ویسٹ انڈیز کو راضی کرنے کی کوشش کررہے ہیں کہ وہ اپنا ایونٹ چند روز پہلے ختم کردے تاکہ وہاں سے آئی پی ایل کنٹریکٹ یافتہ پلیئرز بائیوببل سے بائیوببل منتقل ہوکر انڈین لیگ سے قبل اپنی ٹیموں کو جوائن کرسکیں۔

دونوں ٹی 20 لیگز کاحصہ بننے والے کچھ بڑے پلیئرز میں کیرون پولارڈ، کرس گیل، ڈیوائن براوو، شمرون ہٹمائر، جیسن ہولڈر،نکولس پوران، فابیان ایلن، کیمو پال، سنیل نارائن اور کو. برینڈن میک کولم شامل ہیں۔ یاد رہے کہ گذشتہ برس بھی آئی پی ایل کیلیے بی سی سی آئی نے نہ صرف ایشیا کپ کو ملتوی کرایا تھا بلکہ آسٹریلیا میں شیڈول ٹی 20 ورلڈ کپ کے کورونا وائرس کے نام پر التوا میں بھی پس پردہ اہم کردار ادا کیا تھا۔