Buy website traffic cheap


پاکستانی فنکاروں کے ساتھ کام کرنے والے بھارتیوں کو وارننگ

بھارت میں فلمی صنعت کی سب سے بڑی تنظیم فیڈریشن آف ویسٹرن انڈین سِنی ایمپلائز (ایف ڈبلیو آئی سی سی) نے بھارتی فنکاروں کو سختی کے ساتھ خبردار کیا ہے کہ وہ کسی بھی پاکستانی کے ساتھ کام نہ کریں۔ایف ڈبلیو آئی سی سی کی جانب سے جاری کی گئی پریس ریلیز میں اپنے تمام اراکین کو خبردار کیا گیا ہے کہ پاکستانی اداکاروں، گلوکاروں اور ٹیکنیشنز کے ساتھ ڈیجیٹل پلیٹ فرام سمیت کہیں بھی کسی قسم کا کام نہ کریں۔

فیڈریشن آف ویسٹرن انڈین سِنی ایمپلائز نے اس بات کو افسوس ناک قرار دیا ہے کہ حالیہ عرصے کے دوران کچھ بھارتی آرٹسٹ پاکستانی گلوکار راحت فتح علی خان کے ساتھ کام کرتے رہے ہیں۔
پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ کچھ اراکین پاکستانی فنکاروں کے ساتھ نئے پروجیکٹس کی تیاری کے مراحل میں ہیں۔بھارتی تنظیم نے خبردار کیا ہے کہ کسی بھی پاکستانی فنکار یا گلوکارکے ساتھ کسی بھی قسم کا کام کرنے والے شخص کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔
خیال رہے کہ 2016 میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج پر ہونے والے ایک حملے کے بعد سے پاکستانی فنکاروں پر بھارت میں کام کرنے پر پابندی عائد ہے۔ 2018 میں ایف ڈبلیو آئی سی ای نے پاکستانی فنکاروں اور ٹیکنیشنز پر بھارت کی فلموں اور ڈراموں میں بھی کسی قسم کا کام کرنے پر پابندی عائد کر دی تھی۔