Buy website traffic cheap


منشا پاشا نے’ فرنٹ لائن ہیروز ‘کی کہانیاں بیان کردیں

معروف اداکارہ منشا پاشا نے پاکستان کے ا ن ’فرنٹ لائن ہیروز‘ کی کہانیاں بیان کردیں جو اپنی زندگی خطرے میں ڈال کر قوم کی حفاظت کر رہے ہیں۔گزشتہ روز پاکستان شوبز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والی معروف اداکارہ منشا پاشا نے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر ہیش ٹیگ FrontLineHeroes کا استعمال کرتے ہوئے کچھ ٹوئٹس کیے جس میں ا نہوں نے پاکستان کے ا ن ’فرنٹ لائن ہیروز‘ کی کہانیاں بیان کیں جو کورونا وائرس کی جنگ میں اپنی جان خطرے میں ڈال کر عوام کی زندگیوں کی حفاظت کر رہے ہیں۔

منشاپاشا نے اپنے پہلے ٹوئٹ میں لکھا کہ ’آج میں ا ن لوگوں کی کہانی بیان کر رہی ہوں جو اپنی زندگی داوپر لگا کر ہماری حفاظت کر رہے ہیں۔‘اداکارہ نے اپنے دوسرے ٹوئٹ میں ایک بیرون ملک مقیم پاکستانی ڈاکٹر کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ’ماہم اکبر ایک ڈاکٹر ہیں جو اِس وبائی مرض کے ا?غاز سے ہی کورونا کے مریضوں کا علاج کررہی ہیں۔‘

ا نہوں نے لکھا کہ ’ماہم اکبر بیرون ملک مقیم ایک پاکستانی ڈاکٹر ہیں جن کی آئی سی یو میں ڈیوٹی ہوتی ہے اور وہ ہر ہفتے 80 گھنٹوں کی ڈیوٹی سرانجام دے رہی ہیں۔‘منشا پاشا نے اپنے تیسرے ٹوئٹ میں لکھا کہ ’ماہم انسانیت کی خدمت کرنے کے لیے ہم آپ کا شکریہ ادا کرتے ہیں، اللّہ آپ کو سلامت رکھے آمین۔‘

اداکارہ نے اپنے چوتھے ٹوئٹ میں پی آئی اے کے کچھ پائلٹس کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ’ہم ا ن تمام پاکستانی پائلٹس کا شکریہ ادا کرتے ہیں جو بیرون ممالک پھنسے پاکستانیوں کو وطن واپس لارہے ہیں اور اِس مشکل گھڑی میں فوری طور پر درکار طبی سامان بھی پاکستان لے کر آرہے ہیں۔‘

ا نہوں نےاپنے پانچویں ٹوئٹ میں لکھا کہ ’ہم آپ کی خدمات کے لیے آپ کا شکریہ ادا کرتے ہیں، اللّہ آپ کو اِس کا اجر دے گا آمین۔‘
منشاپاشا نے اپنے چھٹے ٹوئٹ میں ایبٹ آباد کے میڈیکل سینٹر کے دو ڈاکٹرز کی تصاویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ’ڈاکٹر عبیر حیات کورونا کی جنگ میں مریضوں کی حفاظت کرتے ہوئے بغیر کسی حفاظتی ساز و سامان کے 12 گھنٹے کی شفٹ کرتی ہیں جبکہ اِن کے ساتھی ڈاکٹر، ڈاکٹر ایثار احمد بھی اِن ہی کے ساتھ مل کر پاکستانی قوم کی حفاظت میں لگے ہوئے ہیں۔‘

اداکارہ نے اپنے آخر ٹوئٹ میں لکھا کہ ’پی پی ای کی کمی کی وجہ سے عبیر حیات کے کچھ ساتھی ڈاکٹرز کورونا کا شکار ہوگئے ہیں۔‘ا نہوں نے لکھا کہ ’اللّہ تعالیٰ ان کی حفاظت کرے اور جلد ہی ان تمام ڈاکٹرز کے پاس پی پی ای پہنچ جائے۔‘

واضح رہے کہ کورونا وائرس سے لڑنے والے ہمارے فرنٹ لائن ہیروز کو پاکستانی فنکار اور دیگر نامور شخصیات مختلف طریقوں سے خراجِ تحسین پیش کرتی نظر ا?رہی ہیں۔