Buy website traffic cheap


بھرپور اور جاندارماہانہ مشاعرہ

رپورٹ۔ شہزاد احمد شےخ
گزشتہ دنوں پاکستان اکادمی ادبےات لاہور مےں مسلسل بارش اور سفّاک جاڑے کے باوجود لاہور کی معروف ادبی تنظےم مےواتی دنےا نے اےک خوبصورت اور شاندار مشاعرے کا انعقاد کےا۔مشاعرے مےں اگرچہ شعراءکی تعداد کم تھی لےکن اُس کے باوجود ےہ اےک بھرپور اور جاندار مشاعرہ تھا۔
مشاعرے کی کرسیءصدارت پرسےنئےر شاعر جناب طارق واصفی صاحب جلوہ افروز تھے، جبکہ نظامت کے فرائض محترم رےاض رومانی صاحب نے ادا کئے اور کےا ہی خوب نظامت کی ۔حسب ِ رواےت ناظمِ مشاعرہ ہونے کی حےثےت سے رےاض رومانی صاحب نے اپنے کلام سے آغاز کےا۔ باقی دوسرے شعرائے کرام کا منتخب کلام پےشِ خدمت ہے۔
جواد راسخ
چھٹ گئےں تارےکےاں سب آپﷺ ہی سے ےا نبیﷺ
آپﷺ کے دم سے ہوئی دونوں جہاں مےں کہکشاں
رےاض رومانی، ناظمِ مشاعرہ
زےست ےوں روز تِرے در پہ کھڑی ہوتی ہے
جےسے اک شخص کو عادت سی پڑی ہوتی ہے
طارق واصفی۔ صدرِ محفل
ہم شہرِ تمنا سے کچھ خواب اُٹھا لائے
بے خواب ہی رہنے کے اسباب اٹھا لائے
کرامت بخاری۔ مہمانِ خاص
بہتر نہےں کسی سے تو کمتر نہےں ہوں مےں
ادنا سا اِک فقےر ہوں افسر نہےں ہو مےں
ممتاز راشد لاہوری۔
تےری کےا کےا صِفت کرے راشد
مےرے پروردِگارِ گل بدنہ
شہزاد احمد شےخ
شام پئی شہزاد نہ آےا
آخری وےکھی لاری رات
اعجازاللہ ناز۔
اب کے بچھڑے اےسے موسم خوابوں کے
ٹوٹ کے بچھڑےںجےسے پتے شاخوں کے
مسعود خان اِرحم
مےں زندہ لاش دے وانگوںمٹی دا ڈھےر ہو جاواں
کہ وےری روز چاہندا اے کدی مےںزےر ہو جاواں

اسداللہ ارشد مےو۔ ( مےزبان)
ار شد اپنی ماں بولی ہے مےواتی
مےواتی کی آدَر اپنی آدَر ہے
اسلم شوق
نئےں ہوندے تے سعد نئےں ہوندے
چور تے کٹھے ہو جاندے نےں
پروےن وفاہاشمی۔
بزمِ وفا مےں اور چراغاں کرےں گے ہم
تھوڑی وفا کی آج ضرورت ہے آپ سے
راﺅ کلےم خاں کلےم
گوار نام لےنا بھی نہےں ہے جس کو اب مےرا
اسی کو اب تک بھی مےری پہچان کہتے ہےن