Buy website traffic cheap


عملی اقدام کی عدم دستیابی،سراج الحق نے حکومت کو آڑے ہاتھوں لے لیا

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کورونا وائرس کے باعث موجودہ ملکی صورتحال پر حکومت کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ حکومت روزانہ امدادکا اعلان کرتی ہے مگر ابھی تک کسی کو ایک روپیہ نہیں ملا۔

سینیٹر سراج الحق نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ حکومت فوری طور پر بجلی و گیس کے بلوں کی معافی کا اعلان کرے اور یوٹیلٹی سٹورز پر اشیائے خورد ونوش کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے۔انہوں نے کہا کہ مزدوروں کے گھروں میں فاقوں کی نوبت آگئی ہے، حکومت روزانہ امدادکا اعلان کرتی ہے مگر ابھی تک کسی کو ایک روپیہ نہیں ملا۔سراج الحق نے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ٹائیگرز کے لیے خطیر رقم خرچ کر کے چار لاکھ شرٹس بنوا ر ہی ہے جب کہ یہی رقم ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف کی حفاظت کے لیے خرچ کی جا سکتی تھی۔

سراج الحق نے مزید کہا کہ اس وقت ضرورت اس امر کی ہے کہ ڈاکٹرز کے مشورے سے ایک نیا کوڈ آف کنڈکٹ بنایا جائے۔واضح رہے کہ ملک میں کورونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن کا سلسلہ جاری ہے جس کے باعث یومیہ دیہاڑی کمانے والے افراد کھانے پینے کی ضروری اشیاء سے محروم ہو گئے ہیں۔

پاکستان میں کورونا وائرس کے باعث اب تک 45 افراد جاں بحق اور 2900 کے قریب متاثر ہو چکے ہیں۔