Buy website traffic cheap

The sale of the old building of the Pakistani embassy in America is complete

امریکا میں پاکستانی سفارت خانے کی پرانی عمارت کی فروخت کا عمل مکمل

اسلام آباد: وفاقی حکومت کی ہدایات کی روشنی میں پاکستانی سفارت خانہ واشنگٹن ڈی سی نے آج آر اسٹریٹ واشنگٹن ڈی سی پر واقع سفارت خانے کی پرانی عمارت کو فروخت کرنے کا عمل مکمل کر لیا ہے۔اس حوالے سے لنکن لائبریری، والڈورف آسٹوریا ہوٹل واشنگٹن میں ایک تقریب منعقد ہوئی۔ تقریب میں کانگریس کی خاتون رکن جیسمین کروکٹ، کانگریس کے رکن گریگوری میکس اور سابق رکن ایڈی برنیس جانسن نے شرکت کی۔یہ پراپرٹی ایک پاکستانی نژاد امریکی عبدالحفیظ خان نے خریدی ہے جس نے 7.1 ملین ڈالر کی سب سے زیادہ بولی کی پیشکش کی تھی اور اسے وفاقی کابینہ کی جانب سے منظور کر لیا گیا تھا۔کانگریس کی سابق خاتون رکن ایڈی برنیس نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے عبدالحفیظ خان کو تاریخی عمارت خریدنے پر مبارکباد دی۔ انہوں نے حفیظ خان کی کامیابیوں پر روشنی ڈالی اور ان کی مستقبل کی کامیابیوں کے حوالے سے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔عبدالحفیظ خان نے اپنے ریمارکس میں وزیر اعظم پاکستان اور وفاقی کابینہ کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے ان کی پیشکش کو قبول کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی امریکن شہری ہونے کے ناطے ان کے لیے ایک ایسی عمارت کا مالک ہونا فخر کی بات ہے جس نے کئی دہائیاں پاکستانی کمیونٹی کی خدمت کی۔وفاقی کابینہ نے 30 نومبر 2022 کو ہونے والے اپنے اجلاس میں اس حقیقت کو مدنظر رکھتے ہوئے کہ یہ عمارت گزشتہ دو دہائیوں سے زیر استعمال نہیں تھی اور امریکی حکام کی جانب سے اس کی سفارتی حیثیت کو واپس لیے جانے کے بعد ٹیکسز کی مد میں کثیر اخراجات آ رہے تھے اور بلڈنگ کی دیکھ بھال اور اس پر اٹھنے والے دیگر اخراجات، جو کہ ٹیکس دہندگان کو اٹھانے تھے، کو مدنظر رکھتے ہوئے اس عمارت کو فروخت کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سفیر پاکستان مسعود خان نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ کابینہ کے فیصلے کے مطابق جائیداد کی فروخت اور منتقلی کی گئی ہے۔ انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ کوئی اور جائیداد فروخت نہیں کی جا رہی۔