Buy website traffic cheap


اربوں ڈالرز ملنے کے باوجود پاکستانی معیشت کیلئے برا دن

لاہور(ویب ڈیسک) چین سے اربوں ڈالرز ملنے کے باوجود پاکستانی معیشت کیلئے رواں سال کا سب سے برا دن، اسٹاک ایکسچینج میں سال کا کم ترین کاروبار ہوا، 100 انڈیکس 403 پوائنٹس کمی سے 38128 پر بند ہوا، کاروباری دن میں صرف 2 ارب 66 کروڑ روپے کا کاروبار ہو سکا۔ تفصیلات کے مطابق رواں ہفتے کا پہلا دن رواں سال کے دوران ملکی معیشت سے متعلق تباہ کن ثابت ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق : پیر کے روز پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں سال کا کم ترین کاروبار ہوا۔ اسٹاک ایکسچینج کا 100 انڈیکس 403 پوائنٹس کمی سے 38128 پر بند ہوا۔ جبکہ اسٹاک ایکسچینج میں کاروباری دن میں صرف 2 ارب 66 کروڑ روپے کا کاروبار ہو سکا۔ برادر ملک چین کی جانب سے 2ارب 10کروڑڈالر ملنے کے باوجود کاروباری ہفتے کے پہلے روزپیرکوپاکستان اسٹاک ایکسچینج میں اتار چڑھائو کے بعد زبردست مندی رہی اور کے ایس ای100انڈیکس 38500،38400،38300اور38200کی نفسیاتی حدوں سے گرگیا،مندی کے نتیجے میںسرمایہ کاروں کی79ارب56کروڑروپے سے زائدڈوب گئے ،کاروباری حجم گذشتہ روز کی نسبت33.27فیصدکم جبکہ74.84فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔ پاکستانی مارکیٹ میں پیرکو کاروبارکا آغاز ملے رجحان سے ہواتاہم امریکی ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپے کے دبائو کے نتیجے میں مقامی سرمایہ کار گروپ تذبذب کا شکار نظرآئے اورسرمایہ کاری سے گریزکیا، جس کے نتیجے میں ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس 38053پوائنٹس کی نچلی سطح پر ریکارڈ کیاگیاتاہم بعدازاںحکومتی مالیاتی اداروں،مقامی بروکریج ہائوسز سمیت دیگر انسٹی ٹیوشنز کی جانب سے توانائی، ٹیلی کام،بینکنگ،سیمنٹ اوردیگرمنافع بخش سیکٹرمیں خریداری کی گئی،جس کے نتیجے میں ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای100 انڈیکس کی38100پوائنٹس کی حدبحال ہوگئی تاہم اتارچڑھائوکاسلسلہ سارادن جاری رہا۔ مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس403.21پوائنٹس کمی سی38128.66پوائنٹس پر بندہوا۔مجموعی طور پر322کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سی61کمپنیوں کے حصص کے بھاؤمیں اضافہ،241کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ20کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں79ارب56کروڑ1لاکھ26ہزار845 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی، جس کے نتیجے میں سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر77کھرب66ارب49کروڑ60لاکھ39ہزار552روپے ہوگئی۔ پیرکومجموعی طور پر5کروڑ64لاکھ74ہزار750شیئرزکاکاروبارہوا،جوجمعہ کی نسبت2کروڑ81لاکھ65ہزار710شیئرز کم ہیں۔ قیمتوں کے اتار چڑھاؤ کے حساب سے فلپس موریس کے حصص سرفہرست رہے ،جس کے حصص کی قیمت157.27روپے اضافے سی3924.08روپے اورصنوفائی ایونٹس کے حصص کی قیمت389.45روپے اضافے سی825.00روپے پر بند ہوئی۔نمایاں کمی نیسلے پاکستان کے حصص میں ریکارڈکی گئی،جس کے حصص کی قیمت389.45روپے کمی سی7399.60روپے اوروائتھ پاک لمیٹڈکے حصص کی قیمت46.63روپے کمی سی965.87روپے ہوگئی ۔ پیرکوکے الیکٹرک لمیٹڈ کی سرگرمیاں55لاکھ4ہزار500شیئرز کے ساتھ سرفہرست رہیں،جس کے شیئرز کی قیمت31پیسی کمی سی5.39روپے اورورلڈکال ٹیلی کام کی سرگرمیاں37لاکھ31ہزار500شیئرز کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی،جس کے شیئرز کی قیمت10پیسے کمی سی1.08روپے ہوگئی۔پیرکوکے ایس ای30انڈیکس198.22پوائنٹس کمی سی18040.46پوائنٹس،کے ایم آئی30انڈیکس1063.21پوائنٹس کمی سی61906.21پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئر انڈیکس284.62پوائنٹس کمی سی27912.97پوائنٹس پر بند ہوا ۔