Buy website traffic cheap

shainmain

نئی کورونا ویکسین کی تیاری میں ترک جوڑے کا نمایاں کردار

کولون جرمنی(مانیٹرنگ ڈیسک) فائزر کمپنی نے آج کووڈ 19 کے خلاف ویکسین کی انسانی آزمائش کے ابتدائی نتائج کا اعلان کیا ہے لیکن بہت کم لوگ جانتے ہیں کہ اس کی پشت پر جرمن نڑاد ترک میاں بیوی کا نہایت اہم کردار ہے۔55 سالہ اووَر شاہین اور ان کی 53 سالہ بیوی اوزلم توریکی دونوں ہی پیشے کے لحاظ سے سائنس داں ہیں جو کینسر کی امیونوتھراپی میں بین الاقوامی شہرت رکھتے ہیں۔

نیویارک میں قائم فائزر کمپنی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ ویکسین 43 ہزار سے زائد افراد پر آزمائی گئی ہے جس میں امریکی، جرمن اور ترک شامل ہیں لیکن درحقیقت ایک اور جرمن کمپنی، بایون ٹیک نے اس اہم ویکسین میں نہایت کامیاب کردار ادا کیا ہے۔ یہ کمپنی جرمنی میں پناہ لینے والے ترک جوڑے نے قائم کی ہے۔

جرمن شہر، مینز میں قائم بایونٹیک اس لحاظ سے ایک بڑی کمپنی کے طور پر ابھر کر سامنے آئی ہے جس نے کورونا ویکسین کے لیے بڑے پیمانے میں طبی آزمائش کی ہے اور اب تک نئی ویکسین 90 فیصد مو¿ثر ثابت ہوئی ہے اور اس کے کوئی سائیڈ افیکٹ بھی سامنے نہیں آئے۔

اب حال یہ ہے کہ اووَرشاہین اس وقت جرمنی کے 100 امیرترین افراد میں شامل ہیں اور کمپنی کے بورڈ اراکین میں ان کی بیگم بھی شامل ہیں۔ گزشتہ سال بایون ٹیک کے اثاثے 4.6 ارب ڈالر تھی اور گزشتہ ہفتے اس کے حصص 21 ارب ڈالر تک پہنچ چکے تھے۔ یہ جوڑا کینسر کے ابھرتے ہوئے علاج یعنی امیونوتھراپی میں نمایاں مقام رکھتا ہے۔