Buy website traffic cheap

US warplanes and helicopters

امریکی جنگی طیارے اور ہیلی کاپٹرز طالبان کی تفریح کا سامان بن گئے

کابل: امریکا 20 سال کی طویل جنگ کے بعد ناکام و نا مراد افغانستان سے واپس چلا گیا لیکن پیچھے کئی جنگی طیارے، ہیلی کاپٹرز اور آلات جنگ ناکارہ بنا کر چھوڑ گیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی کمانڈر جنرل کینتھ میکنزی نے بتایا ہے کہ افغانستان میں 73 کے قریب طیارY، ہیلی کاپٹرZ اور 70 مسلح گاڑیاں چھوڑ آئے ہیں تاہم ان سب کو ناکارہ بنادیا ہے تاکہ کسی کے استعمال میں نہ آسکیں۔

جیسے ہی امریکا کی آخری پرواز نے کابل کو چھوڑا ویسے ہی طالبان کی اسپیشل فورس ”بدری 313“ نے اندر داخل ہوکر سرچ آپریشن کیا اور ایئرپورٹ کی کلیئرنس دی جس کے بعد ترجمان طالبان اپنی ٹیم کے ہمراہ دورے پر آئے اور میڈیا سے گفتگو کی۔

میڈیا سے گفتگو کے بعد طالبان رہنماﺅں نے امریکی فوج کے چھوڑے گئے طیاروں اور ہیلی کاپٹروں کے ساتھ تصاویر بھی بنوائیں جب کہ جنگجو ان طیارے اور ہیلی کاپٹرز کے ساتھ شغل میں مصروف ہوگئے۔

کوئی جنگجو ہیلی کاپٹر پر چڑھ بیٹھا تو کسی نے طیارے میں پائلٹ کی نشست سنبھال لی اور اڑان بھرنے کی ایکٹنگ کرکے لطف اندوز ہوتے رہے۔ایسا لگ رہا تھا جیسے طویل اور تھکا دینے والی جنگ کے بعد طالبان اپنی فتح کے پرمسرت لمحات سے لطف اندوز ہو رہے ہوں۔

طالبان نے فتح کی خوشی میں ہوائی فائرنگ بھی کی اور امریکی طیاروں پر امارت اسلامی کا پرچم بھی لہرایا۔واضح رہے کہ اس سے قبل کابل کا کنٹرول حاصل کرنے کے بعد طالبان جنگجوﺅں کی پارک میں جھولا جھولتے اور ڈوجنگ کار چلاتے ویڈیوز بھی سامنے آئی تھیں